Home / کاروبار / کراچی سے لاہور تک گیس پائپ لائن بچھانے کی منظوری

کراچی سے لاہور تک گیس پائپ لائن بچھانے کی منظوری

منصوبے کے ذریعے 1 ارب 20 کروڑ مکعب فٹ گیس روزانہ فراہم کی جاسکے گی، فوٹو: فائل

منصوبے کے ذریعے 1 ارب 20 کروڑ مکعب فٹ گیس روزانہ فراہم کی جاسکے گی، فوٹو: فائل

 اسلام آباد: اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے کراچی سے لاہور تک نئی گیس پائپ لائن بچھانے کے منصوبے کی منظوری دے دی۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق اکنامک کوآرڈی نیشن کمیٹی (ای سی سی) کا اجلاس وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت اسلام آباد میں منعقد ہوا جس میں متعدد اقتصادی امور زیر بحث آئے اور کئی منصوبوں کی منظوری دی گئی۔

کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے سوئی سدرن اور ناردرن گیس پائپ لائنز کی طرف سے کراچی سے لاہور تک آر ایل این جی تھری پائپ لائن پراجیکٹ کے لیے فنڈز کی فراہمی کے منصوبے کی منظوری دے دی، منصوبے کے ذریعے 1 ارب 20 کروڑ مکعب فٹ گیس روزانہ فراہم کی جاسکے گی۔اقتصادی رابطہ کمیٹی نے پیٹرولیم ڈویژن کو منصوبے کے لیے سرکاری اور نجی اشتراک عمل کے امکانات کا جائزہ لینے کی بھی ہدایت کی۔

کمیٹی نے سوئی سدرن گیس کمپنی کے لیے آدم ایکس ون سے 10 ملین مکعب کیوبک فٹ یومیہ اور آدم ویسٹ ایکس ون سے 18 ملین مکعب فٹ یومیہ گیس مختص کرنے کی تجویز کی منظوری بھی دی، گیس کی قیمت کا تعین پیٹرولیم پالیسی کے تحت کیا جائے گا۔

دریں اثنا ای سی سی نے کاٹن کی درآمد پر عائد سیلز ٹیکس اور کسٹم ڈیوٹی ختم کرنے کی بھی منظوری دی جس کے خاتمے کا اطلاق 8 جنوری سے ہوگا۔ اجلاس میں وزیراعظم اور شرکا نے سیکرٹری خزانہ شاہد محمود کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا، شاہد محمود 6 جنوری کو اپنی مدت ملازمت پوری کرکے ریٹائرڈ ہوجائیں گے۔

About محمد ہارون عباس قمر

محمد ہارون عباس، صحافی، براڈکاسٹراورسافٹ وئر انجینئرپاکستان کے مانچسٹر فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم فیصل آباداوربراڈکاسٹنگ کی تعلیم ہلورسم اکیڈمی ، ہالینڈسے حاصل کی۔ کمپیوٹر میں تعلیم اسلام آباد، پاکستان سے حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ، ریڈیائی صحافت سے وابستہ رہے ہیں۔اس حوالے سے پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلزکے ساتھ ساتھ ریڈیو ایران،ریڈیو پاکستان سے ان کی وابستگی رہی۔ تعلیم اور صحافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے علاوہ ایران، سری لنکا، نیپال، وسطی ایشیائی ریاستوں‌کے علاوہ مشرقی یوروپ کے مختلف ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔مختلف اخبارات میں سماجی، سیاسی اور تکنیکی امور پر ان کے مضامین شائع ہوتے رہتے ہیں۔علاوہ ازیں اردو زبان کو کمپیوٹزاڈ شکل میں ڈھالنے میں ان کا بہت بڑا کردار ہے۔ محمد ہارون عباس ممتاز این جی اوز سے وابستہ رہے ہیں۔ جن میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ساوتھ ایشین سنٹر اور پاکستان کی غیر سرکاری تنظیموں کے نمائندہ فورم پاکستان این جی اوز فیڈرشین شامل ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی میڈیا ونگ اسلام آباداور پاکستان کے پارلیمنٹرینز کی تنظیم پارلیمنٹرین کمشن فار ہیومین رائٹس میں بھی تکنیکی امور کے نگران رہے ۔وہ پاکستان کے سب سے بڑے نیوز گروپ جنگ گروپ آف نیوزپیپرز، پاکستان کے اردو زبان کے فروغ کے لئے قائم کئے گئے ادارے مقتدرہ قومی زبان ، پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی گروپ دیوان گروپ آف کمپنیز کو تکنیکی خدمات فراہم کرتے رہے ہیں۔ محمد ہارون عباس القمر آن لائن کے انتظامی اور تکنیکی امور کے نگران ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انٹرنیٹ پر پاکستان کی تمام نیوز سائٹس کے پلیٹ فارم پاکستان سائبر نیوز ایسوسی ایشن کے پہلے صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے