Home / کاروبار / ماحولیاتی آلودگی کیخلاف 100 ارب ڈالر کا فنڈ قائم

ماحولیاتی آلودگی کیخلاف 100 ارب ڈالر کا فنڈ قائم

5سال میں105ملین پودے لگانے کاہدف،جنگلات صوبائی معاملہ،وفاق سہولت کارہے، حکام۔ فوٹو: فائل

5سال میں105ملین پودے لگانے کاہدف،جنگلات صوبائی معاملہ،وفاق سہولت کارہے، حکام۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد: گرین پاکستان پروگرام کے تحت اب تک 15ملین پودے لگائے جاچکے ہیں جب کہ آئندہ 5سال میں 105ملین پودے لگائے جائیں گے۔ 

سینیٹ قائمہ کمیٹی موسمیاتی تبدیلی میں بتایا گیا کہ گرین پاکستان پروگرام کے تحت اب تک 15ملین پودے لگائے جاچکے ہیں ، آئندہ 5سال میں 105ملین پودے لگائے جائیں گے۔ جنگلات صوبائی معاملہ ہے جبکہ وفاق صرف سہولت کارہے۔

کمیٹی نے اٹھارویں ترمیم کے ماحولیات، صحت اورتعلیم کاشعبہ وفاق کے بجائے صوبوں کو تفویض ہونے سے پیداشدہ آئینی اور قانونی مسائل کودورکرنے کیلیے اٹھارویں ترمیم کا جائزہ لینے کی سفارش کردی۔کمیٹی نے اس ضمن میں آئندہ اجلاس میں تمام صوبائی سیکریٹریز موحولیات کوبھی بلانے کافیصلہ کیاہے۔

اجلاس چیئرمین میریوسف بادینی کی زیرصدارت ہوا۔ آئی جی جنگلات ناصرمحمودسیدنے بریفنگ میں بتایاکہ جنگلات کامحکمہ قیام پاکستان سے قبل بھی صوبائی معاملہ تھااوراب بھی صوبائی معاملہ ہے ۔کمیٹی نے زیرزمین پانے کے معیار اور گرتی ہوئی سطح پرتشویش کااظہارکیا۔

موسمیاتی تبدیلی کی ذیلی کمیٹی کی جانب سے منظوری شدہ نیشنل ڈیزاسٹرمنیجمنٹ ترمیمی بل پرمزیدغورکاکام بل محرک میاں عتیق کی اجلاس میں عدم شرکت کے باعث آئندہ اجلاس تک موخرکردیاگیا۔

About محمد ہارون عباس قمر

محمد ہارون عباس، صحافی، براڈکاسٹراورسافٹ وئر انجینئرپاکستان کے مانچسٹر فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم فیصل آباداوربراڈکاسٹنگ کی تعلیم ہلورسم اکیڈمی ، ہالینڈسے حاصل کی۔ کمپیوٹر میں تعلیم اسلام آباد، پاکستان سے حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ، ریڈیائی صحافت سے وابستہ رہے ہیں۔اس حوالے سے پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلزکے ساتھ ساتھ ریڈیو ایران،ریڈیو پاکستان سے ان کی وابستگی رہی۔ تعلیم اور صحافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے علاوہ ایران، سری لنکا، نیپال، وسطی ایشیائی ریاستوں‌کے علاوہ مشرقی یوروپ کے مختلف ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔مختلف اخبارات میں سماجی، سیاسی اور تکنیکی امور پر ان کے مضامین شائع ہوتے رہتے ہیں۔علاوہ ازیں اردو زبان کو کمپیوٹزاڈ شکل میں ڈھالنے میں ان کا بہت بڑا کردار ہے۔ محمد ہارون عباس ممتاز این جی اوز سے وابستہ رہے ہیں۔ جن میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ساوتھ ایشین سنٹر اور پاکستان کی غیر سرکاری تنظیموں کے نمائندہ فورم پاکستان این جی اوز فیڈرشین شامل ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی میڈیا ونگ اسلام آباداور پاکستان کے پارلیمنٹرینز کی تنظیم پارلیمنٹرین کمشن فار ہیومین رائٹس میں بھی تکنیکی امور کے نگران رہے ۔وہ پاکستان کے سب سے بڑے نیوز گروپ جنگ گروپ آف نیوزپیپرز، پاکستان کے اردو زبان کے فروغ کے لئے قائم کئے گئے ادارے مقتدرہ قومی زبان ، پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی گروپ دیوان گروپ آف کمپنیز کو تکنیکی خدمات فراہم کرتے رہے ہیں۔ محمد ہارون عباس القمر آن لائن کے انتظامی اور تکنیکی امور کے نگران ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انٹرنیٹ پر پاکستان کی تمام نیوز سائٹس کے پلیٹ فارم پاکستان سائبر نیوز ایسوسی ایشن کے پہلے صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے