Home / اہم ترین / تیسرا فیصلہ بھی آئے گا‘ کالے حرفوں والے فیصلے سنہری حرفوں میں نہیں لکھے جائیں گے‘ نواز شریف

تیسرا فیصلہ بھی آئے گا‘ کالے حرفوں والے فیصلے سنہری حرفوں میں نہیں لکھے جائیں گے‘ نواز شریف

گاڈ فادر، سیلین مافیا اور چورڈاکو کہا گیا پھر دوسرے دن بولاجاتا ہے کہ سیاسی لیڈروں کا احترام کرتے ہیں
آئی ٹی ایکسپرٹ نے بھی کہہ دیا کہ کیلبری فونٹ 2005 میں موجود تھا جس سے ہمارے مؤقف کی تائید ہوتی ہے، میڈیا سے گفتگو
اسلام آباد (صباح نیوز) سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ نیب کے گواہ نے خود کہا ہے کہ گاڈفادر، سیسلین مافیا، چور ڈاکو کہا گیا، پھر دوسرے دن کہا جاتا ہے سیاسی لیڈروں کا احترام ہے، مجھے آپ پارٹی کی صدارت سے نکال رہے ہیں تیسرا فیصلہ بھی آرہا ہے جس میں مجھے الیکشن لڑنے سے بھی نااہل کریں گے۔ سابق وزیراعظم نواز شریف نے جمعہ کے روز اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ کالے حروف والے بہت فیصلے ہیں نہیں سمجھتا کہ ایسا کوئی فیصلہ ہے کہ سنہری حروف سے لکھا جائے، پارٹی صدر کو نکالنا پری پول دھاندلی ہے۔ (ن) لیگ کو سینیٹ الیکشن سے محروم کیا جارہا ہے، مجھے آپ پارٹی کی صدارت سے نکال رہے ہیں تیسرا فیصلہ بھی آرہا ہے مجھے پتا ہے کہ یہ مجھے الیکشن لڑنے سے بھی محروم کریں گے۔ میاں نواز شریف نے مزید کہاکہ آج بھی کہا اور کل بھی کہا تھا کہ کلیبری فونٹ 2006ء میں دستیاب تھا، گواہ نے آج کہاکہ وہ آئی ٹی ایکسپرٹ نہیں، گواہ نے خود کہا ہے کہ 2006ء میں کیلبری فونٹ موجود تھا، ہمارے موقف کی تائید ہوئی ہے جب کہ جے آئی ٹی کے سوالوں کا جواب آہستہ آہستہ مل رہا ہے جب کچھ نہیں ملا تو ضمنی ریفرنسز لائے جارہے ہیں لیکن لوگوں کو سمجھ آرہی ہے کہ اس کیس میں کچھ نہیں۔

About محمد ہارون عباس قمر

محمد ہارون عباس، صحافی، براڈکاسٹراورسافٹ وئر انجینئرپاکستان کے مانچسٹر فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم فیصل آباداوربراڈکاسٹنگ کی تعلیم ہلورسم اکیڈمی ، ہالینڈسے حاصل کی۔ کمپیوٹر میں تعلیم اسلام آباد، پاکستان سے حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ، ریڈیائی صحافت سے وابستہ رہے ہیں۔اس حوالے سے پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلزکے ساتھ ساتھ ریڈیو ایران،ریڈیو پاکستان سے ان کی وابستگی رہی۔ تعلیم اور صحافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے علاوہ ایران، سری لنکا، نیپال، وسطی ایشیائی ریاستوں‌کے علاوہ مشرقی یوروپ کے مختلف ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔مختلف اخبارات میں سماجی، سیاسی اور تکنیکی امور پر ان کے مضامین شائع ہوتے رہتے ہیں۔علاوہ ازیں اردو زبان کو کمپیوٹزاڈ شکل میں ڈھالنے میں ان کا بہت بڑا کردار ہے۔ محمد ہارون عباس ممتاز این جی اوز سے وابستہ رہے ہیں۔ جن میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ساوتھ ایشین سنٹر اور پاکستان کی غیر سرکاری تنظیموں کے نمائندہ فورم پاکستان این جی اوز فیڈرشین شامل ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی میڈیا ونگ اسلام آباداور پاکستان کے پارلیمنٹرینز کی تنظیم پارلیمنٹرین کمشن فار ہیومین رائٹس میں بھی تکنیکی امور کے نگران رہے ۔وہ پاکستان کے سب سے بڑے نیوز گروپ جنگ گروپ آف نیوزپیپرز، پاکستان کے اردو زبان کے فروغ کے لئے قائم کئے گئے ادارے مقتدرہ قومی زبان ، پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی گروپ دیوان گروپ آف کمپنیز کو تکنیکی خدمات فراہم کرتے رہے ہیں۔ محمد ہارون عباس القمر آن لائن کے انتظامی اور تکنیکی امور کے نگران ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انٹرنیٹ پر پاکستان کی تمام نیوز سائٹس کے پلیٹ فارم پاکستان سائبر نیوز ایسوسی ایشن کے پہلے صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے