تیسرا فیصلہ بھی آئے گا‘ کالے حرفوں والے فیصلے سنہری حرفوں میں نہیں لکھے جائیں گے‘ نواز شریف

گاڈ فادر، سیلین مافیا اور چورڈاکو کہا گیا پھر دوسرے دن بولاجاتا ہے کہ سیاسی لیڈروں کا احترام کرتے ہیں
آئی ٹی ایکسپرٹ نے بھی کہہ دیا کہ کیلبری فونٹ 2005 میں موجود تھا جس سے ہمارے مؤقف کی تائید ہوتی ہے، میڈیا سے گفتگو
اسلام آباد (صباح نیوز) سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ نیب کے گواہ نے خود کہا ہے کہ گاڈفادر، سیسلین مافیا، چور ڈاکو کہا گیا، پھر دوسرے دن کہا جاتا ہے سیاسی لیڈروں کا احترام ہے، مجھے آپ پارٹی کی صدارت سے نکال رہے ہیں تیسرا فیصلہ بھی آرہا ہے جس میں مجھے الیکشن لڑنے سے بھی نااہل کریں گے۔ سابق وزیراعظم نواز شریف نے جمعہ کے روز اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ کالے حروف والے بہت فیصلے ہیں نہیں سمجھتا کہ ایسا کوئی فیصلہ ہے کہ سنہری حروف سے لکھا جائے، پارٹی صدر کو نکالنا پری پول دھاندلی ہے۔ (ن) لیگ کو سینیٹ الیکشن سے محروم کیا جارہا ہے، مجھے آپ پارٹی کی صدارت سے نکال رہے ہیں تیسرا فیصلہ بھی آرہا ہے مجھے پتا ہے کہ یہ مجھے الیکشن لڑنے سے بھی محروم کریں گے۔ میاں نواز شریف نے مزید کہاکہ آج بھی کہا اور کل بھی کہا تھا کہ کلیبری فونٹ 2006ء میں دستیاب تھا، گواہ نے آج کہاکہ وہ آئی ٹی ایکسپرٹ نہیں، گواہ نے خود کہا ہے کہ 2006ء میں کیلبری فونٹ موجود تھا، ہمارے موقف کی تائید ہوئی ہے جب کہ جے آئی ٹی کے سوالوں کا جواب آہستہ آہستہ مل رہا ہے جب کچھ نہیں ملا تو ضمنی ریفرنسز لائے جارہے ہیں لیکن لوگوں کو سمجھ آرہی ہے کہ اس کیس میں کچھ نہیں۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں