Home / کھیل / پشاور زلمی کی تقریب‘ کپل شرما کو مدعو کرنے پر پاکستانی فنکار سراپا احتجاج

پشاور زلمی کی تقریب‘ کپل شرما کو مدعو کرنے پر پاکستانی فنکار سراپا احتجاج

پی ایس ایل منتظمین کے اقدام سے مجھ سمیت تمام پاکستانی فنکاروں کی دل آزاری ہوئی‘ کاشف خان
بھارت میں پاکستانی کرکٹرز اور فنکاروں پر پابندی، ہمارے لوگ دشمن ملک کے فنکاروں کو سر کا تاج بنارہے ہیں، سلیم آفریدی و دیگر کا ردعمل
کراچی(اسپورٹس رپورٹر)معروف کامیڈی فنکار کاشف خان نے پی ایس ایل میں شریک ٹیم پشاور زلمی کی دبئی میں منعقدہ تقریب میں بھارتی فنکار کپل شرما کو مدعو کیے جانے پر شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے پی ایس ایل منتظمینکے اس اقدام سے مجھ سمیت تمام پاکستانی کامیڈی فنکاروں کی دل ازاری ہوئی ہے، انھوں نے اپنے بیان میں کہا کہ پاکستانی کرکٹرز اور فنکاروں کی بھارت میں انٹری بند ہے لیکن ہمارے ملک کے لوگ اپنے فنکاروں کو نظر انداز کرکے دشمن ملک کے فنکاروں کو سر کا تاج بنارہے ہیں جس پر پوری فنکار برادری شدید مذمت کرتی ہے۔ کاشف خان نے کہا کہ انھیں بھارتی ٹی وی کے پروگرام کامیڈی سرکس میں چیمپین ہونے کا اعزاز حاصل رہا ہے جبکہ دیگر کامیڈی فنکار شکیل صدیقی، روف لالہ، سلیم آفریدی اور فیصل مسعود بھی بھارت میں اپنے فن کا لوہا منواچکے ہیں۔دریں اثنا معروف کامیڈین سلیم آفریدی نے بھی اس سلسلے میں اپے مزمتی ردعمل کا اظہارکیا ہے اور کہا کہ پاکستانی کامیڈی فنکاروں کو نہ صرف بھارت بلکہ دنیا بھر میں زبردست پذیرائی ملتی ہے اور لوگ ہمارے فن کی قدر کرتے ہیں لیکن ہمارے ملک کے لوگ ہمیں زیرو اور بھارتی فنکاروں کو ہیرو تصور کرتے ہیں۔

About محمد ہارون عباس قمر

محمد ہارون عباس، صحافی، براڈکاسٹراورسافٹ وئر انجینئرپاکستان کے مانچسٹر فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم فیصل آباداوربراڈکاسٹنگ کی تعلیم ہلورسم اکیڈمی ، ہالینڈسے حاصل کی۔ کمپیوٹر میں تعلیم اسلام آباد، پاکستان سے حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ، ریڈیائی صحافت سے وابستہ رہے ہیں۔اس حوالے سے پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلزکے ساتھ ساتھ ریڈیو ایران،ریڈیو پاکستان سے ان کی وابستگی رہی۔ تعلیم اور صحافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے علاوہ ایران، سری لنکا، نیپال، وسطی ایشیائی ریاستوں‌کے علاوہ مشرقی یوروپ کے مختلف ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔مختلف اخبارات میں سماجی، سیاسی اور تکنیکی امور پر ان کے مضامین شائع ہوتے رہتے ہیں۔علاوہ ازیں اردو زبان کو کمپیوٹزاڈ شکل میں ڈھالنے میں ان کا بہت بڑا کردار ہے۔ محمد ہارون عباس ممتاز این جی اوز سے وابستہ رہے ہیں۔ جن میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ساوتھ ایشین سنٹر اور پاکستان کی غیر سرکاری تنظیموں کے نمائندہ فورم پاکستان این جی اوز فیڈرشین شامل ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی میڈیا ونگ اسلام آباداور پاکستان کے پارلیمنٹرینز کی تنظیم پارلیمنٹرین کمشن فار ہیومین رائٹس میں بھی تکنیکی امور کے نگران رہے ۔وہ پاکستان کے سب سے بڑے نیوز گروپ جنگ گروپ آف نیوزپیپرز، پاکستان کے اردو زبان کے فروغ کے لئے قائم کئے گئے ادارے مقتدرہ قومی زبان ، پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی گروپ دیوان گروپ آف کمپنیز کو تکنیکی خدمات فراہم کرتے رہے ہیں۔ محمد ہارون عباس القمر آن لائن کے انتظامی اور تکنیکی امور کے نگران ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انٹرنیٹ پر پاکستان کی تمام نیوز سائٹس کے پلیٹ فارم پاکستان سائبر نیوز ایسوسی ایشن کے پہلے صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے