Home / پاکستان / نوازشریف اپنے لیے ملک کو خطرے میں ڈالنا چاہتے ہیں: بلاول بھٹو

نوازشریف اپنے لیے ملک کو خطرے میں ڈالنا چاہتے ہیں: بلاول بھٹو

زرداری ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ حکومت کا کام جلسے کرنا نہیں ہوتا، عوام کو کیوں نکالا اور پاناما سے کوئی غرض نہیں، عوام غربت، بیروزگاری کا خاتمہ اور اپنے مسائل کا حل چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کیوں نکالا کے علاوہ بہت مسائل ہیں، ملک معاشی بحران آرہاہے، خارجہ پالیسی بھی بحران کا شکار ہے، پاکستان میں سنجیدہ مسائل ہیں، ہمیں کسی ایک شخص کی پرواہ نہیں کہ اس کے ساتھ کیا ہوا۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ نوازشریف ہارس ٹریڈنگ کے استاد ہیں ہم ان کا مقابلہ نہیں کرسکتے، وہ اپنے لیے ملک کو خطرے میں ڈالنا چاہتے ہیں، وہ ایک اصول پر چل رہے ہیں کہ میں نہیں تو کچھ نہیں۔

انہوں نے کہا کہ احتساب صرف پیپلزپارٹی کے لیے شروع ہوا، اب باقی سب پریشان ہیں کہ ان کے ساتھ کیوں ہورہا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ نوازشریف ملک میں واحد انسان ہیں جو تین بار وزیراعظم بنے، ان کی حکومت کو پانچ سال ہونے والے ہیں لیکن انہوں نے پارلیمان کو مضبوط کرنے کے لیے کیا کیا؟ انہوں نے سینیٹ اور اسمبلی میں کتنی حاضری یقینی بنائی؟ اب وہ عدالتی اصلاحات کی بات کررہے ہیں۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ نوازشریف کو جمہوریت کی مضبوطی اور عدالتی اصلاحات میں کوئی دلچسپی نہیں، ہم عدالتی اصلاحات کی بات کرتے آئے ہیں، ہم پچھلے چار سال سے کہتے آرہے ہیں لیکن اب یہ تین ماہ میں کیا کریں گے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی حکمت عملی ہے کہ وہ کسی نہ کسی طرح بچ جائیں جب کہ انہوں نے ایک وزیراعظم کی شہادت پر مٹھائیاں بانٹیں اور شہید بی بی کے خلاف جعلی کیسز بنائے۔

انہوں نے کہا کہ ہم سب کے لیے ایک قانون چاہتے ہیں، کہیں پر کوئی امتیاز نہیں چاہتے، نوازشریف ابھی سے کہہ رہے ہیں کہ انہیں کوئی اعتماد نہیں۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ کوشش ہے سینیٹ میں اچھی کارکردگی دکھائیں، انتخابات وقت پر ہوں گے، ہم عوام کے مسائل اور یہ لوگ مجھے کیوں نکالا کے ساتھ لڑیں گے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پانچ سال حکومت میں رہے تب پی آئی اے کی نجکاری کیوں نہیں کی؟ اب وزیراعظم کی اپنی ایئرلائن ہے اس لیے وہ پی آئی اے بیچ رہے ہیں۔

About محمد ہارون عباس قمر

محمد ہارون عباس، صحافی، براڈکاسٹراورسافٹ وئر انجینئرپاکستان کے مانچسٹر فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم فیصل آباداوربراڈکاسٹنگ کی تعلیم ہلورسم اکیڈمی ، ہالینڈسے حاصل کی۔ کمپیوٹر میں تعلیم اسلام آباد، پاکستان سے حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ، ریڈیائی صحافت سے وابستہ رہے ہیں۔اس حوالے سے پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلزکے ساتھ ساتھ ریڈیو ایران،ریڈیو پاکستان سے ان کی وابستگی رہی۔ تعلیم اور صحافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے علاوہ ایران، سری لنکا، نیپال، وسطی ایشیائی ریاستوں‌کے علاوہ مشرقی یوروپ کے مختلف ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔مختلف اخبارات میں سماجی، سیاسی اور تکنیکی امور پر ان کے مضامین شائع ہوتے رہتے ہیں۔علاوہ ازیں اردو زبان کو کمپیوٹزاڈ شکل میں ڈھالنے میں ان کا بہت بڑا کردار ہے۔ محمد ہارون عباس ممتاز این جی اوز سے وابستہ رہے ہیں۔ جن میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ساوتھ ایشین سنٹر اور پاکستان کی غیر سرکاری تنظیموں کے نمائندہ فورم پاکستان این جی اوز فیڈرشین شامل ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی میڈیا ونگ اسلام آباداور پاکستان کے پارلیمنٹرینز کی تنظیم پارلیمنٹرین کمشن فار ہیومین رائٹس میں بھی تکنیکی امور کے نگران رہے ۔وہ پاکستان کے سب سے بڑے نیوز گروپ جنگ گروپ آف نیوزپیپرز، پاکستان کے اردو زبان کے فروغ کے لئے قائم کئے گئے ادارے مقتدرہ قومی زبان ، پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی گروپ دیوان گروپ آف کمپنیز کو تکنیکی خدمات فراہم کرتے رہے ہیں۔ محمد ہارون عباس القمر آن لائن کے انتظامی اور تکنیکی امور کے نگران ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انٹرنیٹ پر پاکستان کی تمام نیوز سائٹس کے پلیٹ فارم پاکستان سائبر نیوز ایسوسی ایشن کے پہلے صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے