Home / اہم ترین / لیاقت آباد میں پیپلزپارٹی کے جلسے میں شرکت کرنیوالوں کو دھمکیاں

لیاقت آباد میں پیپلزپارٹی کے جلسے میں شرکت کرنیوالوں کو دھمکیاں

جلسے میں شرکت کرنے والوں کو کچھ ہوا تو ذمہ داری ایم کیو ایم پر عائد ہوگی، رہنما پیپلزپارٹی سعید غنی کی پریس کانفرنس
ایم کیو ایم نے شہر میں لسانیت اور نفرت کی سیاست دوبارہ شروع کرکے الطاف حسین کی اولاد ہونے کا ثبوت دے دیا ہے
کراچی (اسٹاف رپورٹر) پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن کے صدر و صوبائی وزیر سعید غنی نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کے لیاقت آباد میں ہونے والے جلسے میں شرکت کرنے والوں کو دھمکیاں دی جارہی ہیں، اگر ان کو کچھ ہوا تو ذمہ داری ایم کیو ایم پر عائد ہوگی۔ شہر میں ایم کیو ایم نے لسانیت اور نفرت انگیز سیاست دوبارہ شروع کرکے الطاف حسین کی اولاد ہونے کا ثبوت دے دیا ہے، شہر میں بینرز اور ہینڈ بلز سے یہ ثابت ہوگیا ہے کہ ایم کیو ایم شہر میں دہشت گردی کی سیاست پر عمل پیرا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کی شب بلاول ہاؤس میڈیا سیل میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پروفیسر این ڈی خان، وقار مہدی، راشد حسین ربانی، تاج حیدر، شہلا رضا، جاوید ناگوری ودیگر بھی موجود تھے۔ سعید غنی نے کہاکہ ایم کیو ایم نے 30 سالوں میں شہر کے ساتھ اتنا کچھ کرکے بھی ہوش کے ناخن نہیں لیے اور آج بھی نفرت کی سیاست پر عمل پیرا ہے، جبکہ پیپلز پارٹی شہر میں امن و محبت اور بھائی چارے کی جدوجہد پرگامزن ہے اور لسانیت کے خاتمے کے لیے ہرممکن اقدامات کر رہی ہے، کراچی میں 30 برسوں سے جو کچھ بھی ہوا اب نہیں ہونے دیں گے۔ ایم کیو ایم آج بھی لوگوں کو آپس میں لڑوانے کی کوشش کر رہی ہے انہوں نے کہاکہ پیپلز پارٹی لوگوں سے ووٹ مانگنے جارہی ہے ایم کیو ایم کی طرح چھیننے نہیں جارہی، وہ دن گئے جب بیلٹ بکس اور ٹھپہ مافیا کے ذریعہ الیکشن جیتا جاتا تھا، آج کراچی کے شہری اپنے حق رائے دہی استعمال کرنے کے لیے آزاد ہیں اب کسی کے دباؤ میں نہیں آئیں گے۔

About محمد ہارون عباس قمر

محمد ہارون عباس، صحافی، براڈکاسٹراورسافٹ وئر انجینئرپاکستان کے مانچسٹر فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم فیصل آباداوربراڈکاسٹنگ کی تعلیم ہلورسم اکیڈمی ، ہالینڈسے حاصل کی۔ کمپیوٹر میں تعلیم اسلام آباد، پاکستان سے حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ، ریڈیائی صحافت سے وابستہ رہے ہیں۔اس حوالے سے پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلزکے ساتھ ساتھ ریڈیو ایران،ریڈیو پاکستان سے ان کی وابستگی رہی۔ تعلیم اور صحافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے علاوہ ایران، سری لنکا، نیپال، وسطی ایشیائی ریاستوں‌کے علاوہ مشرقی یوروپ کے مختلف ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔مختلف اخبارات میں سماجی، سیاسی اور تکنیکی امور پر ان کے مضامین شائع ہوتے رہتے ہیں۔علاوہ ازیں اردو زبان کو کمپیوٹزاڈ شکل میں ڈھالنے میں ان کا بہت بڑا کردار ہے۔ محمد ہارون عباس ممتاز این جی اوز سے وابستہ رہے ہیں۔ جن میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ساوتھ ایشین سنٹر اور پاکستان کی غیر سرکاری تنظیموں کے نمائندہ فورم پاکستان این جی اوز فیڈرشین شامل ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی میڈیا ونگ اسلام آباداور پاکستان کے پارلیمنٹرینز کی تنظیم پارلیمنٹرین کمشن فار ہیومین رائٹس میں بھی تکنیکی امور کے نگران رہے ۔وہ پاکستان کے سب سے بڑے نیوز گروپ جنگ گروپ آف نیوزپیپرز، پاکستان کے اردو زبان کے فروغ کے لئے قائم کئے گئے ادارے مقتدرہ قومی زبان ، پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی گروپ دیوان گروپ آف کمپنیز کو تکنیکی خدمات فراہم کرتے رہے ہیں۔ محمد ہارون عباس القمر آن لائن کے انتظامی اور تکنیکی امور کے نگران ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انٹرنیٹ پر پاکستان کی تمام نیوز سائٹس کے پلیٹ فارم پاکستان سائبر نیوز ایسوسی ایشن کے پہلے صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے