Home / شوبز / چین کی پاکستانی معیشت میں شمولیت خطرناک قرار

چین کی پاکستانی معیشت میں شمولیت خطرناک قرار

آئی ایم ایف نے تحفظات کا اظہار کردیا، پاک چین اقتصادی منصوبوں کا ڈیزائن مضبوط ہونا چاہیے،مورس فلیڈ
نیویارک (صباح نیوز) آئی ایم ایف نے پاکستانی معیشت میں چین کی شمولیت کو خطرناک قرار دے دیا۔ ماہر معاشیات مورس اوبسٹ فیلڈ نے کہا ہے کہ پاک چین اقتصادی منصوبوں کا ڈیزائن مضبوط ہونا چاہیے، ادا نہ کیے جاسکنے والے قرضوں کو نظرانداز کردیا جائے۔ عالمی مالیاتی ادارے اور ورلڈ بینک کی سالانہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے آئی ایم ایف کے ماہر معاشیات مورس اوبسٹ فیلڈ نے کہاکہ پاکستان نے باقاعدہ طور پر مالی امداد کے لیے رابطہ نہیں کیا، بیل آؤٹ پیکیج پر بات ہوئی تو اس کا مقصد پاکستان کو اپنی پوری صلاحیت پر پہنچا دے گا، پاکستان کو بڑھتے ہوئے مالی اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارے، کم ہوتے زرمبادلہ کے ذخائر اور غیر لچک دار کرنسی کی وجہ سے سرمایہ کاری کے خلاء کا سامنا ہے۔ عالمی مالیاتی ادارہ پاکستان کے ساتھ مذاکرات میں شامل ہوا تو اس کا مقصد اصلاحات ہوگا جو مخصوص تفصیلات فراہم کیے بغیر ہی ملکی صلاحیت کو وسیع کر دے گا۔ حکومت نے ساختی اصلاحات نافذ کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے جس سے فنڈز کے ذریعے مالی مدد کی عادت ختم ہو جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کو انفرااسٹرکچر کی ترقی کی زیادہ ضرورت ہے پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں سرمایہ کاری پاکستان کے لیے فائدہ مند ہوسکتی ہے تاہم چین کی شمولیت سے پاکستان کو خطرات بھی لاحق ہوسکتے ہیں۔ ماہر معاشیات نے کہاکہ یہ بہت اہم ہے کہ ان منصوبوں کا ڈیزائن بہت مضبوط ہو جس میں ادا نہ کیے جاسکنے والے قرضوں کو نظرانداز کیا جائے۔

Source: Showbiz Ag

About Web Desk

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے