Breaking News
Home / اہم ترین / پشاور ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار، دہشت گردی کے ملزمان کی رہائی پر حکم امتناع جاری

پشاور ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار، دہشت گردی کے ملزمان کی رہائی پر حکم امتناع جاری

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے فوجی عدالتوں سے دہشت گردی کے الزام میں سزا پانے والے 68 ملزمان کو رہا کرنے کے پشاور ہائیکورٹ کے حکم کو کالعدم قرار دے کر حکم امتناع جاری کر دیا۔
عدالت عظمیٰ میں سماعت کے دوران ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ پشاور ہائیکورٹ نے حقائق کا درست جائزہ نہیں لیا، ملزمان دہشت گردی جیسے سنگین جرائم میں ملوث ہیں لہٰذا فوجی عدالتوں سے سنائی گئی سزاؤں کو بحال کیا جائے۔
اٹارنی جنرل کی استدعا پر سپریم کورٹ نے پشاور ہائیکورٹ کے حکم پر عملدرآمد روکتے ہوئے ملزمان کی رہائی روک دی ہے اور جیل سپرنٹنڈنٹس کو ملزمان کو رہا نہ کرنے کا حکم دیا ہے۔
عدالت نے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی۔
پشاور ہائیکورٹ نے دہشت گردی کے الزام میں فوجی عدالتوں سے سزا پانے والے 68 ملزمان کی سزا کالعدم قرار دے کر انہیں رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔

About ویب ڈیسک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے