Breaking News
Home / اہم ترین / بدعنوانی کاخاتمہ اورعوام کی لوٹی ہوئی رقم کی واپسی نیب کی اولین ترجیح ہے،چیئرمین نیب

بدعنوانی کاخاتمہ اورعوام کی لوٹی ہوئی رقم کی واپسی نیب کی اولین ترجیح ہے،چیئرمین نیب

اسلام آباد۔قومی احتساب بیورو کےچیئرمین جسٹس جاوید اقبال نےکہاہےکہ ملک سے بدعنوانی کاخاتمہ اور عوام کی لوٹی ہوئی رقم کی واپسی نیب کی اولین ترجیح ہے۔ نیب بدعنوان عناصر کے خلاف بلا تفریق احتساب کا عمل جاری رکھے گا ۔

نیب نے بدعنوان عناصر سے عوام کی لوٹی ہوئی تقریباََ 297ارب روپےکی رقم برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائی ہے۔

انہوں نےکہاکہ مضاربہ اورمشارکہ سکینڈلز میں ہزاروں افراد کی لوٹی گئی رقم کی واپسی کیلئےنیب سنجیدہ اقدامات اٹھارہا ہے اور ابتک34 بڑے ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جاچکی ہے اور مقدمات معزز احتساب عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔

ان خیالات کا اظہارقومی احتساب بیورو کےچیئر مین جسٹس جاوید اقبال نےنیب ہیڈ کوارٹرز میں کھلی کچہری میں کیا۔

انہوں نےملک بھر سےآئےہوئےعوام کی بدعنوانی سےمتعلق شکایات کوانتہائی توجہ اوراطمینان کےساتھ فرداََ فرداََ َسنا اورکہاکہ نیب عوام کی بدعنوانی سےمتعلق شکایات کاقانون اورشواہد کےمطابق جائزہ لےگااوربدعنوان عناصرکوقانون کےمطابق منطقی انجام تک پہنچایاجائےگا۔

چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال نے اپنےمنصب کی زمہ داریاں سنبھالنےکے بعد نیب افسران سےخطاب میں اس بات کا اعلان کیاتھا کہ وہ ہر ماہ کی آخری جمعرات کو عوام کی بدعنوانی سے متعلق شکایات بذاتِ خود نیب ہیڈ کوارٹرز میں سنیں گے۔

اپنے وعدہ پرعمل کرتےہوئے چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال ہرماہ کی آخری جمعرات کو نیب ہیڈ کوارٹرزمیں کھلی کچہری میں ملک بھر سےآنےوالے شکایا ت کنندہ گان کی بدعنوانی سےمتعلق شکایات انتہائی توجہ اوراطمینان کےساتھ فرداََ فرداََ َ سنتے ہیں بلکہ شکایات پر موقع پر ہی قانون کے مطابق ضروری احکامات بھی جاری کرتے ہیں۔

اس کےعلاوہ چیئر میننیب جسٹس جاوید اقبال کی ہدایت پر نیب کےتمام علاقائی دفاترکےڈائریکٹر جنرلز ہرماہ کی آخری جمعرات کو عوام کی بدعنوانی سے متعلق شکایات اپنے علاقائی دفاتر میں بذاتِ خودسنتے ہیںجس کی وجہ سےنہ صرف نیب پرعوام کےاعتماد میں اضافہ ہواہے۔

بلکہ تمام شکایات کنندہ گان نے چیئرمین نیب جناب جسٹس جاوید اقبال کی ملک سےبدعنوانی کےخاتمےکیلئےکی جانےوالی کاوشوں کو سراتے ہیں۔ نیب کےچیئر مین نےملک سے بدعنوانی کےخاتمہ کیلئےعملی اقدامات کی بدولت گزشتہ ایک سال میں نیب کو بدعنوانی کےخاتمےکیلئے ایک معتبر ادارہ بنا دیا ہے ۔

جسکابرملااظہارملکی اورغیر ملکی ادارے بھی اپنی رپورٹس میں کرتےہیں۔قومی احتساب بیوروکےچیئرمین جناب جسٹس جاوید اقبال نےنیب کے افسران اور اہلکاروں کو ہدایت کی ہےکہ عوام کی بدعنوانی سےمتعلق تمام شکایات کو کمپیوٹرائزڈ کرنےکےعلاوہ تمام شکایات کنندگان کوان کی شکایت کی وصولی کی اطلاع کےعلاوہ ان کی شکایات کوقانون کےمطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائےاورتمام شکایات کنندہ گان کےساتھ خوش اخلاقی سےپیش آنےکےعلاوہ انکی عزت نفس کا ہمیشہ خیال رکھاجائےاس سلسلہ میں کوئی کوتائی برداشت نہیں کی جائے گی۔

About ویب ڈیسک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے