Breaking News
Home / اہم ترین / وفاقی کابینہ نےبلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلی سندھ سمیت 20افراد کےنام ای سی ایل سےنکالنےکافیصلہ موخرکردیا

وفاقی کابینہ نےبلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلی سندھ سمیت 20افراد کےنام ای سی ایل سےنکالنےکافیصلہ موخرکردیا

اسلام آباد۔وفاقی کابینہ نےبلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلی سندھ سمیت 20افراد کےنام ای سی ایل سےنکالنےکا فیصلہ موخرکرتےہوئے کہاہےکہ معاملےپرسپریم کورٹ کےتحریری فیصلے کاانتظارکیا جائیگامعاملہ آئندہ اجلاس میں دوبارہ زیرغورآئیگاجبکہ وفاقی وزیراطلاعات ونشریات چوہدری فواد حسین نےکہاہےکہ ای سی ایل میں شامل ناموں کا قائم کر دہ کمیٹی جائزہ لےگی سپریم کورٹ کے فیصلےپرنظرثانی کی بھی درخواست پر غور کریں گے پاکستان میں 28 فیصد عوام کو سسٹم گیس فراہم کی جا رہی ہے63 فیصد عوام ایل پی جی استعمال کررہےہیں وزیراعظم عمران خان نے گیس بحران پرقابو پانے کیلئے وزارت پیٹرولیم کو فوری جامع پالیسی تیار کرنے کی ہدایت کی ہے شاہد خاقان عباسی خود کو گیس کا آئن سٹائن سمجھتے ہیں مسلم لیگ ن کے وزراء نے جس جس چیز پر ہاتھ رکھا وہ نقصان میں ہے۔

جمعرات کووزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ اجلاس ہوامیں جس میں26نکاتی ایجنڈے پرغورکیاگیا۔اجلاس میں منی لانڈرنگ کیس کی جےآئی ٹی رپورٹ کامعاملہ بھی زیربحث آیااورمختلف افراد کےنام ای سی ایل میں رکھنےاورنکالنےکےبارےمیں تجاویزپیش کی گئیں۔

وفاقی کابینہ نے پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلہ موخر کرتےہوئےکہا کہ اس معاملے پر سپریم کورٹ کے تحریری فیصلے کا انتظار کیا جائے گا،معاملہ آئندہ اجلاس میں دوبارہ زیرغور آئے گا۔

وفاقی کابینہ کےاجلاس کےبعد میڈیا کو بریفنگ دیتےہوئےوفاقی وزیراطلاعات ونشریات چوہدری فواد حسین نےکہاکہ سندھ سےبیرون ملک غیرقانونی رقم بھجوانےکاسکینڈ ل2015میں سامنےآیا۔وزیراطلاعات نےکہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کےمرکزی رہنما آصف زرداری،وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اوررہنما پیپلزپارٹی فریال تالپورکرپشن اسکینڈل میں مرکزی کردارہیں،جےآئی ٹی کی سفارشات پر172 افراد کےنام ای سی ایل میں ڈالے گئے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ وزارت قانون نے بتایا ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ ابھی تک نہیں ملا تحریری فیصلہ آتے ہی اس پرعمل درآمد کیا جائیگا۔ وفاقی کابینہ نے 20 افراد کے نام فوری نکالنے کی سفارش مسترد کردی ہے، ایک کمیٹی قائم کی گئی ہے جو ای سی ایل میں شامل ناموں کا جائزہ لے گی۔

انہوں نے کہاکہ کمیٹی وزیرِمملکت برائےداخلہ شہریار آفریدی،وزیر،قانون فروغ نسیم،وزیرِاعظم کےمشیربرائےاحتساب شہزاد اکبراور سیکریٹری داخلہ پرمشتمل ہوگی جو اپنی سفارشات کابینہ کو بھیجےگی۔وزیراطلاعات نےکہاکہ کمیٹی اس بات کا بھی جائزہ لےگی کہ فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرنا ہے یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ برآمدات میں اضافہ ابتدا سے ہی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل رہا ہے اور دسمبر کے مہینے میں برآمدات میں 4.5 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ درآمدات میں 8.5 فیصد کمی بھی ہوئی ہے۔انہوںنے کہاکہ ملک کے تجارتی خسارے میں ایک ماہ کے دوران 54 کروڑ ڈالر تقریباً 19 فیصد کمی ہوئی ہے۔

وزیراطلاعات نےکہا کہ حکومت کی جانب سے جو پالیسیاں مرتب کی گئی تھیں ان کےثمرات ملنا شروع ہوگئےہیں جس پر کابینہ نے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

چوہدری فواد نےکہاکہ پاکستان کےاندر کاروبارکےمواقع وسیع کرنا چاہتےہیں اور وزیراعظم عمران خان اوورسیز پاکستانیوں کےمسائل کے حل کیلئےکوشاں ہیں۔

وزیر اطلاعات نے کہاکہ وزیراعظم نے وزارت قانون کو حکم دیا ہےکہ48گھنٹوں میں سمندر پار پاکستانیوں کیلئےنوکریوں میں نیگٹو لسٹ جاری کی جائےاس لسٹ کےعلاوہ دوہری شہریت والےپاکستانی دیگر نوکریاں کرسکیں گے۔

انہوں نےکہاکہ پاکستان میں 28 فیصد عوام کو سسٹم گیس فراہم کی جارہی ہے63 فیصد عوام ایل پی جی استعمال کررہے ہیں۔وزیر اطلاعات نےکہاکہ ہر سال 50 ارب روپےکی گیس چوری کا سامنا ہے۔وزیراطلاعات چوہد ری فواد حسین نےکہاکہ وزیراعظم نےوزارت پٹرولیم کو گیس کے حوالے سے جامع پالیسی بنانے کی ہدایت کی ہے گیس کی کمی کے معاملے سے نمٹنے کے لیے کام کیا جارہا ہے۔

وزیراطلاعات نے کہاکہ شاہد خاقان عباسی نے جب وزارت پیٹرولیم سنبھالی تو ایک روپہ بھی قرضہ نہیں تھا شاہد خاقان عباسی خود کو گیس کا آئن اسٹائن ہی سمجھتے ہیں لیکن انہوں نے گیس سیکٹر کو اربوں روپے کا مقروض کر کےچھوڑا۔

وزیراطلاعات نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے وزراء نے جس جس چیز پر ہاتھ رکھا وہ نقصان میں ہے۔ وزیراطلاعات نے کہا کہ وزیراعظم نے وزیراعظم ہائوس کا اضافی بل آنے پر نوٹس لیا ہے۔

وزیراطلاعات فواد چوہدری نے بتایا کہ وزیرِاعظم عمران خان اس وقت وزیراعظم ہاؤس میں رہائش پذیر نہیں ہیں لیکن پھر بھی اس کا بجلی کا بل اتنا ہی آرہا ہے جتنا نواز شریف کے دورِ حکومت میں آتا تھاجس کی وجہ سے وزیرِاعظم نےاس معاملےپرانٹرنل آڈٹ کا حکم دیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ ماضی میں وزیراعظم ہاؤس میں 95ہزار یونٹس بجلی استعمال ہوتی رہی وزیراعظم ہاؤس میں اب 43ہزار یونٹس تک بجلی استعمال ہو رہی ہے۔وزیر اطلاعات نے بتایا کہ ایئر مارشل ارشد ملک کو قائمقام چیف ایگزیکٹو آفیسر پی آئی اے تعینات کیاگیا ہےاور سیکرٹری ایوی ایشن شاہ رخ کو ڈی جی کااضافی چارج دیا گیا ہے ۔

وزیراطلاعات نےکہاکہ عامرعلی احمد کو چیئرمین سی ڈی اےکا اضافی جارج سونپاگیا ہے۔چودھری فواد حسین نےکہاکہ یو اے ای کےساتھ پینے کےصاف پانی کےپلانٹ پرمعاہدہ کیاگیا ہے۔انہوں نےکہاکہ کابینہ نےای سی سی کے یکم جنوری کےفیصلوں کی توثیق کردی ہے۔

چودھری فواد حسین نےکہاکہ کابینہ اجلاس میں ملک میں مہنگائی کی صورتحال پربات کی گئی۔میڈیا سےبات چیت کرتےہوئےوفاقی وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسر وبختیار نےکہاکہ اپوزیشن جماعتیں مہنگائی کابےبنیاد واویلا کررہی ہیں پی پی پی دورمیں افراط زرمیں 11.2فیصد اضافہ ہوا۔وزیرمنصوبہ بندی وترقی نےکہاکہ ماضی کی حکومتوں کےپہلےمالی سال مہنگائی کی شرح میں اضافہ ہوا۔

خسروبختیار نے کہاکہ فیصلہ کیا ہے کہ عوام کو مارکیٹ قیمتوں کے بارے میں مسلسل آگاہ رکھا جائے۔ انہوں نے کہاکہ منافع خوری کی حوصلہ شکنی کر رہے ہیں قیمتوں کےتعین کےنظام کو صوبائی حکومتیں بہتر بنائیں۔وزیرمنصوبہ بندی و ترقی نےکہاکہ حکومت نے مہنگائی کا بوجھ عوام پر نہ ڈالنے کا فیصلہ کیا ہے اور حکومت مختلف پروگراموں کے ذریعے مہنگائی کا بوجھ کم کریگی۔

About ویب ڈیسک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے