Breaking News
Home / اہم ترین / سپریم کورٹ:اصغر خان کیس پر عملدرآمد ختم کرنےکےلیےایف آئی اے کی سفارش مسترد

سپریم کورٹ:اصغر خان کیس پر عملدرآمد ختم کرنےکےلیےایف آئی اے کی سفارش مسترد

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے اصغر خان کیس پر عملدرآمد ختم کرنےکےلیے ایف آئی اےکی سفارش مسترد کردی۔سپریم کورٹ میں اصغر خان عملدرآمد کیس کی سماعت کےدوران چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہاکہ اصغرخان کی زندگی کابڑا حصہ اس کیس میں گزرا،اصل تحقیقات کا وقت آیا تو رکاوٹیں آنےلگیں،ایف آئی اےکہتاہےکہ ان کے پاس شواہد نہیں تاہم عدالت نےتاحال کیس بند نہیں کیا،عدالت کا مقصد صرف 2 افسران کیخلاف تحقیقات نہیں،عدالت اصغر خان کےاہلخانہ کےساتھ کھڑی ہے،اصغر خان کی جدوجہد رائیگاں نہیں جانےدیںگے۔معاملےکی مزید تحقیقات کرائیں گے۔

درخواست گزار کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے عدالت میں بتایا کہ جس فوجی افسر نے رقم تقسیم کرنا تسلیم کیا اس کا بیان نہیں لیا گیا، عدالت با ضابطہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دے، چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ سیکرٹری دفاع آکر بتائیں تحقیقات میں کیا پیشرفت ہوئی، ہر ادارہ سپریم کورٹ کو جوابدہ ہے۔
اس موقع پرڈی جی ایف آئی اےبشیرمیمن نےکہاکہ ایف آئی اےکامینڈیٹ فوجداری تحقیقات کاتھا،ایف آئی اے نے10 سیاستدانوں سے تحقیقات کرناتھیں جس میں سے6سیاستدان انتقال کر چکے ہیں،بقیہ سیاسی رہنماؤں نےرقم وصول سےانکارکیا،بریگیڈیر صاحب سےپوچھاگیا کہ پیسے کیسے دیے مگر کچھ ثابت نہیں کیا، چالان کے لئے ضروری ہے کہ شواہد ہوں۔

چیف جسٹس نےریمارکس دیےکہ کم از کم اس کیس میں اصغر خان کیس فیملی سےبھی پوچھ لیتے،عدالتی فیصلےکےایک ایک صفحےسے ثابت ہواکہ یہ اسکینڈل ہواہے۔عدالت نےدلائل سننےکےبعد اصغرخان کیس پرعملدرآمد ختم کرنےکےلیےایف آئی اےکی سفارش مسترد کردی۔

About ویب ڈیسک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے