Home / پاکستان / بھارتی سرزمین مسلمانوں پر ہوئی تنگ ، ہندو مذہب چھوڑ کراسلام قبول کرنے پر لڑکی کو پولیس نے گرفتار کرلیا

بھارتی سرزمین مسلمانوں پر ہوئی تنگ ، ہندو مذہب چھوڑ کراسلام قبول کرنے پر لڑکی کو پولیس نے گرفتار کرلیا

وکیل ٹی تمل ملار نے مدراس ہائیکورٹ میں لڑکی کی بازیابی کیلئے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اپنایا تھا کہ 27 سالہ ڈینٹسٹ لڑکی نے اسلام قبول کرنے کیلئے تامل ناڈو کی توحید جماعت سے رابطہ کیا تھا لیکن جب لڑکی کے والدین کو اس واقعے کا پتہ چلا تو انہوں نے اپنی بیٹی کو گھر میں قید کرلیا۔ لڑکی نے بڑی مشکل سے اپنے والدین کے چنگل سے نکل کر جماعت اہل قرآن و حدیث سوسائٹی سے رابطہ کیا اور اپنی جان کے تحفظ کا مطالبہ کیا۔

وکیل نے اپنی درخواست میں الزام عائد کیا کہ 19 اگست کو لڑکی کے تحفظ کیلئے پولیس سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بجائے تحفظ فراہم کرنے کے الٹا لڑکی کو پکڑ کرنظر بند کردیا۔ وکیل نے بتایا کہ 21 اگست کو وہ اپنی موکلہ سے ملنے کیلئے گئے تو پولیس نے انہیں ملاقات کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔

درخواست کی سماعت کے دوران عدالت نے حکم دیا کہ لڑکی کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔ جسٹس ایم ستیہ نارائن اور جسٹس بی پوگلیندھی پر مشتمل بینچ نے قرار دیا کہ لڑکی بالغ ہے اور مذہب اختیارکرنا اس کا بنیادی حق ہے، یہ لڑکی کی مرضی ہے کہ وہ کون سا مذہب اختیار کرنا چاہتی ہے۔

install suchtv android app on google app store

About عنصر ملک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے