عمران حکومت کو سال کے آخر میں گھرجانا ہوگا، بلاول بھٹو

ہمیں مولانا کی طرح انتہائی قدم اٹھانے پر مجبورکیا جارہا ہے، عمران خان کو فضل الرحمن کیلئے کنٹینر اور کھانا بھیجنا چاہیے
سلیکٹڈ کو الیکشن سے ڈرلگتا ہے، ڈپٹی اسپیکر پہلے بھی سلیکٹڈ تھا اب دوبارہ سلیکٹ ہوگیا، اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا سے گفتگو
لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ ڈپٹی اسپیکر پہلے بھی سلیکٹڈ تھا اب دوبارہ سلیکٹ ہوگیا۔میں کہتا ہوں کہ اگر الیکشن میں دھاندلی نہیں ہوئی تو دوبارہ الیکشن لڑ کرواپس آجائیں لیکن سلیکٹڈ لوگ الیکشن سے ڈرتے ہیں۔ہم اس بات پر قائل ہیں کہ عمران خان کو سال کے آخر تک گھر جانا ہوگا۔ ہمیں بھی مولانا کی طرح انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور کیا جارہا ہے، عمران خان کو اپنے اعلان کے مطابق مولانا کیلئے کنٹینر اور کھانا بھیجنا چاہیے۔انہوں نے اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ صدر زرادری کی طبیعت ٹھیک نہیں ہے، ان کو سہولیات نہیں دی جا رہی ہیں۔ وہ بیمار ضرور ہیں لیکن بہادر ہیں ، حوصلے میں ہیں۔ الزام جو مرضی لگائیں لیکن طبی سہولیات تو دیں۔ وہ بھاگ کر کہیں نہیں جا رہے، وہ پہلے کبھی بھاگے نہ اب بھاگیں گے۔ اس طرح ہتھکنڈوں سے ان کی حکومت نہیں بچے گی۔ان کو جیل میں انسولین تک نہیں دی جارہی۔عدالتی حکم کے باوجود تحفظ نہیں دیا جارہا۔یہاں بھارتی پائلٹ کو بھی سہولیات دی گئیں۔پی ٹی آئی حکومت جمہوریت اور سسٹم کو نہیں چلنے دے رہی، ایک بھی بل پارلیمنٹ سے پاس نہیں کروایا گیا۔بلاول بھٹو نے کہا کہ ہم مولانا فضل الرحمان کی سیاست کی حمایت جاری رکھیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں