KDA کا محکمہ پبلک ہائوسنگ سفید ہاتھی بن گیا

ڈھائی سو سے زائد افسران و ملازمین کی فوج 16 سال سے ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھی ہے
سالوں سے تعینات افسران مافیا بن گئے‘ ادارے کی ریکوری کا نظام بھی تبادہ کردیا
کراچی(وقا ئع نگار خصوصی)سالانہ آمدنی دو کروڑ بھی نہیں جبکہ خرچہ 40کروڑ سے بھی زائد،کے ڈی اے کا محکمہ پبلک ہائوسنگ سفید ہاتھی بن گیا، 2 سرکل اور 8ڈویژن میں ڈھائی سو سے زائد افسران وملازمین کی فوج16سال سے ہاتھ پہ ہاتھ دھرے بیٹھنے پر مجبور، کے ڈی اے کے سینکڑوں فلیٹس،بنگلوز پر افسران کی مبینہ سرپرستی میں قبضہ کئے جانے کا انکشاف،نادہندہ الاٹیز سے فلیٹس واپس لینے کے بجائے افسران خود ہی مبینہ طورپر فلیٹس کی خریدوفروخت میں مصروف، کے ڈی اے کے سینئر افسران نے محکمہ پبلک ہائوسنگ کو مادر پدر آزاد اور ادارے کے اندر ایک اورادارہ قرار دیدیا،الاٹمنٹ،ریکوری،ٹرانسفر ،موٹیشن سمیت دیگر تمام امور محکمہ پبلک ہائوسنگ کا عملہ خود انجام دیتا ہے، سالوں سے پبلک ہائوسنگ میں تعینات افسران محکمے کی مافیا بن گئے، ادارے کی ریکوری کو بری طرح تباہ کردیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں