رئیل اسٹیٹ میں چھپائی گئی دولت کی تلاش شروع

ایف بی آر نے وزارت دفاع اور داخلہ کو بھی اعتماد میں لے لیا
غیر منقولہ جائیدادوں کی خرید و فروخت کا سروے چینی تجویز پر کیا جارہا ہے
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے آئندہ دو سال میں ملک گیر رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں غیر منقولہ جائیدادوں کا سروے کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ سروے کا مقصد غیر منقولہ جائیدادوں کی خرید و فروخت میں چھپائی گئی دولت کا پتا لگانا ہے۔ ایف بی آر سروے چینی تجویز پر شروع کر دیا ہے جس کے تحت ڈیجیٹل لینڈ سروے کرایا جائے گا۔ سروے 30 جون 2021ء تک مکمل کیا جائے گا۔ ایف بی آر کی طرف سے سروے کرانے کے لیے وزارت دفاع اور وزارت داخلہ کو بھی اعتماد میں لیا گیا ہے۔ موصول دستیاب دستاویز کے مطابق ایف بی آر کا ملک گیر ڈیجیٹل کارٹو گرافی کرنے کا عمل دو سال سے التوا کا شکار ہے۔ اسلام آباد کے آئی نائن کے انڈسٹریل ایریا کی جیوٹیکنگ بھی اس سروے میں زیر غور ہے۔ اس کے علاوہ ایف بی آر نے ملک گیر ٹیکس تشخیص اور دستاویزی عمل بنانے کا بھی سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے جوکہ اگلے دو سال میں مکمل ہوگا، ٹیکس تشخیص اور دستاویزی عمل سے ٹیکس چوری کو روکا جاسکے گا۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں