حکمرانوں کو ان ہی کے آئینے میں چہرہ دکھانے کا وقت آگیا ٗ فضل الرحمن

الیکشن کمیشن اپنا وجود کھونے سے پہلے عوام کو مطمئن کرے ٗ فارن فنڈنگ کیس کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے ٗ عوام کے قانونی اور آئینی حق کا تحفظ کرینگے
اپوزیشن موجودہ پارلیمنٹ کو قانون سازی کا حق نہیں دے سکتی ٗ پارلیمنٹ کو تحلیل اور نئے انتخابات کرائے جائیں ٗ جے یو آئی سربراہ کاکراچی میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب
کراچی(اسٹاف رپورٹر)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن اپنا وجود کھونے سے پہلے عوام کو مطمئن کرے اور فارن فنڈنگ کیس کو منطقی انجام تک پہنچائے۔اپوزیشن موجودہ پارلیمنٹ کوقانون سازی کا حق نہیں دے سکتی۔عوام کے قانونی اور آئینی حق کا تحفظ کریں گے، پارلیمنٹ کوتحلیل کیا جائے اور نئے انتخابات کرائے جائیں۔کراچی میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے جمعیت علمائے اسلام (ف) کیسربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ معیشت سمندر میں غرق ہورہی ہے اور حکمران عیاشیاں کررہے ہیں، ایک کروڑ نوکریاں دینے والے 400 ادارے بند کرنے جارہے ہیں، لاکھوں لوگوں کو بے روزگار کردیا گیا ہے۔مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ افواج پاکستان کی قیادت کو عدالتوں میں گھسیٹا گیا اور بے توقیر کیا گیا، ان کے پاس قانون ہے نہ قانونی چارہ جوئی کی اہلیت ہے، یہ جعلی پارلیمنٹ حساس قانون سازی نہیں کرسکتی، ووٹ کو چوری کرکے اقتدار پر قبضے کی اجازت نہیں دی جاسکتی، حکمران جماعت اپنے احتساب سے فرار حاصل کررہی ہے، الیکشن کمیشن اپنا وجود کھونے سے پہلے عوام کو مطمئن کرے اور فارن فنڈنگ کیس کو منطقی انجام تک پہنچائے۔سربراہ جے یو آئی کا کہنا تھا کہ حکمرانوں کو ان کے ہی آئینے میں چہرہ دکھانے کا وقت آگیا ہے، حکومت کی گرتی دیوار کو ایک دھکا دینے کی ضرورت ہے، عوام کا عزم ناجائز حکومت کا خاتمہ کرے گا، ہم نے یہ ملک جمہوریت اور عوام کے لیے حاصل کیا تھا، نئے انتخابات کے انعقاد اور حکومت کے خاتمے تک تحریک جاری رہے گی۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں