پولیو ورکرز کی غلط منظر کشی پر مہوش کا پاکستان مخالف صحافی کو کرارا جواب

کراچی: اداکارہ مہوش حیات نے پاکستان مخالف کینیڈین صحافی طارق فتح کو پاکستانی پولیوورکرز کی غلط عکاسی کرکے پاکستان کا نام بدنام کرنے پر آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کھری کھری سنائی ہیں۔

پاکستان مخالف کینیڈین صحافی طارق فتح نے گزشتہ روز اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو شیئر کرائی تھی جس میں ایک خاتون دو خواتین پولیو ورکرز پر چلاتے ہوئے کہہ رہی تھی کہ وہ اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے نہیں پلائے گی کیونکہ پولیو کے قطرے پینے سے اس کے بچے بیمار ہوجاتے ہیں بعد ازاں اس خاتون نے پولیو ورکرز کے منہ پر دروازہ بندکردیا تھا۔

یہ ویڈیو شیئر کراتے ہوئے طارق نے پاکستانی خواتین کو طنز کا نشانہ بناتے ہوئے  لکھا کہ ایک پاکستانی ماں نہ صرف دو خواتین پولیو ورکر پر چلائی بلکہ ان کے منہ پر دروازہ بھی بند کردیا۔

یہ بھی پڑھیں: مہوش حیات قاسم سلیمانی کی ہلاکت پر ٹرمپ پر برس پڑیں

اداکارہ مہوش حیات نے طارق کو آئینہ دکھاتے ہوئےکہا آپ کی فکرمندی کا شکریہ لیکن سب سے پہلے سوشل میڈیا پر اگلی بار کچھ بھی پوسٹ کرنے سے قبل اپنے ذرائع کی تصدیق کرلیں۔ کیونکہ درحقیقت یہ میری فلم ’’لوڈ ویڈنگ‘‘ کا ایک سین ہے اور اس میں موجود پولیو ورکر میں خود ہوں۔ جب کہ جو خاتون چلارہی ہے وہ بھی ایک اداکارہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ماہرہ خان اور مہوش حیات لاکھوں لوگوں کیلئے رول ماڈل ہیں

مہوش حیات نے طارق فتح کی کمزورمعلومات پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ اس فلم اور اس سین کے ذریعے ہم  پاکستان میں پولیو کے مسئلے پر شعوراجاگر کررہے تھے۔ تاہم یہ دیکھ کر خوشی ہوئی کہ ہماری پرفارمنس بہت بہتر تھی۔

طارق فتح کی پاکستان کو بدنام کرنے کی کوشش کو ناکام بنانے کے لیے سوشل میڈیا پر مہوش حیات کو بے حد سراہا جارہا ہے۔ ایک صارف نے لکھا طارق فتح ٹوئٹر پر نہ صرف غلط بیانی کرتے ہیں بلکہ منفی سوچ بھی پھیلاتے ہیں، مہوش نے بہت اچھا کیا۔

جب کہ ایک صارف نے مہوش حیات کی جانب سے طارق فتح کو اتنا بہترین جواب دینے پر کہا کہ مہوش کو اسی بات پر تمغہ امتیاز ملاہے۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں