ماورا حسین کا 8 سالہ عوز نور کے قاتلوں کو سر عام پھانسی دینے کا مطالبہ

 کراچی: ماورا حسین جنسی زیادتی کے بعد قتل ہونے والی 8 سالہ عوز نور کے قاتلوں کو سرِ عام پھانسی دینے کا مطالبہ کردیا۔

نوشہرہ میں جنسی زیادتی کے بعد قتل ہونے والی 8 سالہ عوز نور کی حمایت میں ماورا حسین نے اپنی ٹوئٹ میں افسردگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں پریشانی کے عالم میں ہوں حتیٰ کہ مجھ سے سانس لینا بھی دشوار لگ رہا ہے۔

انہوں نے معصوم عوز نور کے قتل پر موجودہ نظام پر سوال اُٹھاتے ہوئے کہا کہ کیا ہم اس بار بھی ہوس کا نشانہ بنانے والے مجرموں کو بغیر کسی بحث و مباحثے، بغیر کسی تاخیر اور بغیر کسی ٹرائل کے بھانسی دے پائیں گے ؟۔

یہ خبر بھی پڑھیں: نوشہرہ؛ کمسن بچی عوض نور کے قاتل پڑوسی نکلے، جرم کا اعتراف

ماورا کا برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہنا ہے کہ شرم کی بات ہے کہ اس نااہل نظام کا خمیازہ ننھی کلی جیسی بچی کو بھگتنا پڑا۔ ساتھ ہی انہوں نے عوز نور کی فیملی کے لئے دعا بھی کی۔

یہ خبر بھی پڑھیں:زیادتی وقتل کے ملزمان کو عبرتناک سزائیں دینے کیلیے قانون سازی کا فیصلہ 

واضح رہے کہ تین روز قبل نوشہرہ کی رہائشی ایک کمسن 8 سالہ عوض نور دوپہر تین بجے مدرسے کے لیے گھر سے نکلی اور لاپتا ہوگئ تھی جسے ملزموں نے جنسی زیادتی کے بعد قتل کردیا تھا۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں