ایف اے ٹی ایف کا پاکستانی اقدامات پر اظہار اطمینان

اسلام آباد /بیجنگ(آن لائن+آئی این پی) فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے جوائنٹ ورکنگ گروپ کا پاکستان کی جانب سے منی لانڈرنگ اورٹیرر فنانسنگ کیخلاف کیے گئے اقدامات پر اظہار اطمینان، گرے لسٹ سے نکلنے کا فیصلہ 16 فروری کو پیرس میں ہونے والے اجلاس میں ہوگا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان اورایف ایٹی ایف حکام کے درمیان بیجنگ میں جاری 3روزہ مذاکرات ختم ہو گئے،ایف اے ٹی ایف حکام نے پاکستان کی رپورٹ پرتفصیلی غورکیا۔ اجلاس میں ایف اے ٹی ایف حکام نے پاکستانی وفدسے کوئی سوال نہیں کیا۔ ایف اے ٹی ایف ٹیم کی سربراہی چین کے ڈی جی فنانشل انویسٹی گیشن یونٹ کے سربراہ نے کی۔ مجموعی طورپرپاکستان کی پیشرفت رپورٹ پرردعمل حوصلہ افزارہا۔دوسری جانب چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے بیجنگ میںپریس بریفنگ کے دوران کہا کہ پاکستان نے اپنے اندرونی انسداد دہشت گردی مالی تعاون نظام کو مستحکم کرنے کے لیے عظیم کوششیں کیں اور اس حوالے سے پیشرفت انتہائی واضح ہے ،پاکستان کی سیاسی قوت فیصلہ اور متحرک کوششوں کو عالمی برادری کی جانب سے ہمیشہ تسلیم کیا جائے گا اور وہ اس کی حوصلہ افزائی کرے گی، امید ہے ایف اے ٹی ایف دہشت گردوں کی مالی معاونت کو روکنے کے نظام اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کے خلاف جاری کوششوں کو بہتر بنانے کے لیے پاکستان کی تعمیری حمایت اور معاونت جاری رکھے گا ،چین ایف اے ٹی ایف کی بامقصد ،منصفانہ اور تعمیری رویے کی حمایت جاری رکھے گا اور وہ اس حوالے سے تمام متعلقہ بات چیت میں شریک رہے گا۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں