کراچی سرکلر ریلوے کیلئے زمین سندھ حکومت کو دینے کا فیصلہ

ایم کیو ایم کا نہیں معلوم میں تو سپریم کورٹ کے حکم پر وزیراعلیٰ مراد علی شاہ سے ملنے کراچی آیا ہوں، شیخ رشید
کراچی ریلوے کی شہ رگ ہے اسے نظر انداز نہیں کیا جاسکتا، 38 کنال زمین خالی کروالی ہے، وفاقی وزیر پریس کانفرنس
کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر ریلوے شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ کراچی سرکلر ریلوے( کے سی آر) کیلئے ریلوے کی زمین سندھ حکومت کو دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ انہیں ایم کیو ایم کا نہیں معلوم‘ و ہ تو سپریم کورٹ کے حکم پر وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے ملنے کراچی آئے ہیں۔ وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے ہمیں گائیڈ لائنز دی ہیں اور ہم نے بزنس پلان مانگا ہے۔ ہم تمام ریلوے کے اسکول اور اسپتال پرائیویٹ پارٹنرز کے ساتھ مل کر چلائیں گے۔ ریلوے کے خسارے میں4 ارب روپے کم کئے۔ آئندہ6 ارب کریں گے۔ کے سی آر کیلئے38 کینال زمین خالی کروالی ہے جبکہ مزید5 کینال زمین پر قبضہ ختم ہونا باقی ہے۔ اپنی زمین سندھ حکومت کو دینے کیلئے تیار ہیں۔ 5 کینال اراضی واگزار کرانے کیلئے کل وزیراعلیٰ سندھ سے بات کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایم ایل ون کا منصوبہ پہلے مکمل ہوگا یا کراچی سرکلر ریلوے کا‘ یہ ابھی نہیں بتا سکتا۔ کراچی ریلوے کی شہ رگ ہے۔ اسے نظر انداز کیا گیا۔ فریٹ ٹرین کیلئے متعلقہ افسران کراچی کو ٹرانسفر کیا جارہا ہے کیوں کہ کراچی سے ہی معاشی معاملات کو چلایا جاسکتا ہے۔ وزیر ریلوے نے تیز گام حادثے کے حوالے سے کہا کہ پہلے سلنڈر پھٹے یا پہلے شارٹ سرک ہوا۔ اس بات کا فیصلہ نہیں ہوسکا۔ سانحہ تیز گام سے متعلق رپورٹ کلیئر نہیں‘ 3 افسران کو معاملے کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں