ـ2009 کے متاثر� سری لنکن کھلاڑی بھی پاکستان آنا چا�تے �یں،کمار سنگاکارا

لاہور(جسارت نیوز)کپتان ایم سی سی کمار سنگا کارا کا کہنا ہے کہ پاکستان کے لوگ اور یہاں کے کھانے ہمیشہ اچھے لگے اسی وجہ سے یہاں آ کر خوشی ہوئی ہے، 2009 کے واقعے سے متاثر کھلاڑی بھی یہاں آنا چاہتے ہیں۔چیف ایگزیکٹو پاکستان کرکٹ بورڈ وسیم خان نے ایم سی سی کے کپتان کمار سنگا کارا کے ہمراہ لاہور میں پریس کانفرنس کی، اس دوران سنگاکارا نے کہا کہ آنر بورڈ پر اپنا نام دیکھ کر خوشی ہوئی، پی سی بی اور خاص طور پر وسیم خان کا شکریہ ادا کرتا ہوں ، پاکستان ونڈر فل کرکٹ نیشن ہے۔ایم سی سی کے کپتان نے کہا کہ پاکستان میں کرکٹ واپس آرہی ہے، پاکستان کوسپورٹ کرنا اچھا لگ رہا ہے، سیکورٹی دنیا بھرمیں مسئلہ ہے پاکستان نے اس پرکام کیا اور اعتماد بحال ہوا، پاکستان میں انٹرنیشنل میچز کا ہونا بہت ضروری ہے۔پریس کانفرنس کے دوران وسیم خان نے کہا کہ ایم سی سی کو یہاں خوش آمدید کہتے ہیں، ایم سی سی کا یہاں آنا بہت خوشی کی بات ہے کمار سنگاکار ا کا خاص طور پر شکریہ ادا کرتے ہیں، پاکستان میں وائٹ اور ریڈ بال کرکٹ واپس لا رہے ہیں، خاص طور پر ٹیسٹ کرکٹ بھی شروع ہوئی ہے۔کمار سنگاکارا نے مزید کہا کہ وقاریونس، شعیب اختر، محمد سمیع کے خلاف یہاں ایشین ٹیسٹ چیمپین شپ کھیلی، اچھی کرکٹ کھیلیں گے۔انہوں نے کھیل سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ میں فلیٹ وکٹوں کی امید کررہا ہوں۔وسیم خان نے مزید کہا کہ جنوبی ایشین ٹیمیں آچکی ہیں اب نان ساوتھ ایشین ٹیمیں بھی آئیں تاکہ دنیا کوبتانے کا موقع ملے کہ پاکستان کرکٹ کے لیے محفوظ ملک ہے، جنوبی افریقا کے ساتھ بات چیت آخری مرحلے میں ہے ، اگلے ہفتے تک اس حوالے سے فیصلہ ہوجانا چاہیے۔انہوں نے مزید کہا کہ نیوزی لینڈ ٹیم اگلے برس پاکستان آ ئے گی، نیوزی لینڈ نے ٹیسٹ اور ون ڈے میچز کھیلنے ہیں ۔وسیم خان نے پریس کانفرنس کے دوران کبڈی ورلڈ کپ سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ کبڈی ورلڈ کپ کی وجہ سے قذافی اسٹیڈیم میں تمام میچز ہونا ممکن نہیں تھے، جوں جوں کرکٹ ہوگی سیکورٹی کے حوالے سے آسانیاں بھی ہوں گی۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں