تاجروں کا وزیر اعظم ہاوس کی طرف مارچ ، کشمیر ہائی وے بند کردی

اسلام آباد: مطالبات کے حق ملک بھر سے تاجروں کے قافلے اسلام آباد پہنچنا شروع ہوگئے، تاجروں نے کشمیر ہائے وے کے ایک ٹریک کو بند کردیا۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق آل پاکستان انجمن تاجران نعیم میر گروپ کے بینر تلے ’’ ہارن بجاو حکمران جگاو” احتجاجی تحریک کے تحت ملک بھر سے تاجر گاڑیوں میں ریلیوں کی شکل میں اسلام آباد پہنچنا شروع ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ملک کے مختلف شہروں سے تاجر وزیراعظم ہاوس کی طرف مارچ کرنے کے لیے زیروپوائنٹ پہنچ گئے ہیں۔ چھ سو سے زائد گاڑیوں پر مشتمل ریلی لاہور سے اسلام آباد پہنچ گئی ہے، جبکہ خیبر پختونخوا سے بھی تاجر اسلام آباد پہنچ گئے ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق تاجر رہنما گاڑیوں میں ریلی کی شکل میں اسلام آباد داخل ہوگئے ہیں، تاہم اسلام آباد انتظامیہ نے انہیں زیرو پوائنٹ پر روک دیا ہے۔ دوسری جانب اسلام آباد انتظامیہ نے زیروپوائنٹ کے پاس کشمیر ہائے وے کو بند کردیا ہے اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی ہے۔

اسلام آباد انتظامیہ نے کنٹینر لگاکر تاجروں کو وزیراعظم ہاوس کی طرف مارچ کرنے سے روک دیا ہے۔ بکتربند گاڑیاں اور قیدی وینز کشمیر ہائی وے پر پہنچا دیے گئے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقات کے مطابق تاجروں کی اسلام آباد کی طرف آنے والی ریلیوں کو روکنے کے لیے فیض آباد اور کشمیر ہائی وے بند کر دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ساڑھے 3 سے ساڑھے 6 تک زیرو پوائنٹ سے سرینہ تک روڈ بند رہے گی۔ تاجروں کی ریلی کے باعث فیض آباد بھی بند رہے گا۔

اس سے قبل اسلام آباد روانگی سے قبل لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آل پاکستان انجمن تاجران نعیم میر گروپ کے سربراہ نعیم میر نے کہا کہ حکومت نے بجٹ میں تاجروں کے لیے کچھ نہیں دیا ہے۔ یہ حکومت بلکل تاجر دوست نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ دو سے تین روز میں زیرو پوائنٹ سے وزیر اعظم ہائوس کی طرف مارچ کی تاریخ کا اعلان کر دیا جائے گا۔

مرکزی سیکرٹری جنرل نعیم میر نے کہا کہ گزشتہ روز آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی و صوبائی قائدین کی ویڈیو کانفرنس ہوئی تھی جس میں حکومت کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری تحریک کا مقصد حکومت کو گرانا نہیں بلکہ ان کو جگانا ہے تاکہ وہ ہمارے مسائل حل کریں۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ تاجروں کا کاروبار کے اوقات کار بڑھانے اور ایس اوپیز کے تحت بند کاروبار کھولنے کی اجازت دی جائے۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں