نائیجرمیں حملہ‘ فرانسیسی کارکنوں سمیت 8 افراد ہلاک

شبرسلز ؍ ٹوکیو(انٹرنیشنل ڈیسک) موسمیاتی تبدیلیوں کے باعث مغربی یورپ میں گرمی کی شدت تیزی کے ساتھ بڑھ رہی ہے۔ خبر رساں اداروں کے مطابق برطانیہ، جرمنی، فرانس اور بلجیم میں درجہ حرارت 40 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے۔ برطانیہ کے مختلف علاقوں میں درجہ حرارت 36 ڈگری سینٹی گریڈ تک ریکارڈ کیا گیا ماہرین کا کہنا ہے کہ اگست کا مہینہ گزشتہ 20 برس میں گرم ترین ثابت ہوا ہے۔ اُدھر پیرس میں چہرے پر ماسک کے استعمال کو لازمی قرار دینے کے فورا بعد ہی فرانسیسی دارالحکومت کو شدید گرمی کی لہر کا سامنا کرنا پڑ گیا، تاہم حکومت نے گرمی سے پچنے کے لیے مختلف انتظامات کیے ہیں۔ علاوہ ازیں جرمنی میں گزشتہ ہفتے کے آخر میں درجہ حرارت 38 ڈگری سینٹی گریڈ سے تجاوز کر گیا۔ حکام نے آنے والے دنوں میں گرم طوفانوں کی پیش گوئی کی ہے جب کہ گنجان جنگلاتی علاقوں میں آتش زدگی سے متعلق انتباہ بھی جاری کیا گیا ہے۔بلجیم میں 30 ڈگری سینٹی گریڈ کے ساتھ گرمی کی شدت بڑھنے کے نتیجے میں ساحلوں پر شہریوں کا رش بڑھ گیا ہے۔ دوسری جانب جاپان میں شدید گرمی کی لہر جاری ہے اور ملک کے مشرقی اور مغربی حصوں کے بعض علاقوں میں درجہ حرارت 38 درجے سینٹی گریڈ سے تجاوز کر گیا۔ حکومت کی جانب سے عوام کو لُو لگنے سے بچاؤ کے اقدامات کرنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ محکمہ موسمیاتی کے حکام شمالی کیْوشْو میں لوگوں کو تیز ہواؤں اور بلند لہروں سے بھی خبردار کر رہے ہیں۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں