کیسزکا جلد ازجلد فیصلہ ہوگا تودودھ کا دودھ اورپانی کا پانی ہوگا، چیئرمین نیب

چیئرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ تنقید کرنے سے پہلے آئین اورقانون کودیکھ لیں، کیسزکا جلد ازجلد فیصلہ ہوگا تودودھ کا دودھ اورپانی کا پانی ہوگا۔

نیب ہیڈکوارٹرزمیں  مضاربہ کیس  کے متاثرین میں رقوم کی تقسیم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب نے کہا کہ میں رقوم کی تقسیم کا سلسلہ جاری ہے عوامی شکایات کے ازالے کے لیے کوشاں ہیں اور نیب کی کامیابی میں نائب قاصدسے لےکرچیئرمین تک سب کوکریڈٹ جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایسا نہیں ہے کہ کوئی بےگناہ ہے اوراس کے خلاف کیس یا ریفرنس بنایا گیا ہے، احتساب یک طرفہ ان کونظرآتا ہے جن کی آنکھوں پرپٹیاں بندھی ہوئی ہیں، نیب شفاف اوریکساں احتساب کی پالیسی پرعمل پیرا ہے۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ  نیب کوکسی قسم کا کوئی استثنا حاصل نہیں، چیف جسٹس کےفیصلوں سے ہماری رہ نمائی ہوئی ہےہرکیس کا تمام پہلوں سے جائزہ لے کرمیرٹ پرفیصلہ کرتے ہیں بڑے سیاستدان کہتے ہیں کہ وہ چیئرمین نیب کومناظرےکاچیلنج کرتے ہیں جن لوگوں نے نیب کے قوانین نہیں پڑھے وہ بھی تنقید کرتے ہیں، جائزاورغلط تنقید پران کا مشکورہوں،کم ازکم یاد تورکھا۔

ان کا کہنا تھا کہ نیب کی کارکردگی کومزید بہتربنانے کے لیےکوشاں ہیں  اپنےمنہ میاں مٹھوبننا اچھی بات نہیں،1200 ارب روپے کےریفرنس کے معاملات عدالتوں میں زیرسماعت ہیں اگر نیب ناکام ادارہ ہوتا تویہ 364 ارب روپے کہاں سے نکلتے؟

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں