امریکی نائب صدر کا صدر ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے سے انکار

امریکی نائب صدر مائیک پنس نے امریکی ایوان نمائندگان میں صدرٹرمپ کو 25 ویں آئینی  ترمیم کے ذریعے ہٹانےکی قرار داد منظور ہونے کے باوجود عہدے سے ہٹانے سے انکار کردیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق  امریکی ایوان نمائندگان میں صدرٹرمپ کو 25 ویں آئینی  ترمیم کے ذریعے ہٹانےکی قرار داد منظور کر لی گئی ہے اور ارکان نے کیپٹل ہل حملے کے بعد صدرٹرمپ کو قبل از وقت عہدے سے ہٹانے کی رائے پر اتفاق کیا ہے۔

کیپٹل حملے کے بعد صدر ٹرمپ کے مواخذے کے لیے ایوان نمائندگان میں بحث کی گئی اور 25ویں آئینی ترمیم کے ذریعے ٹرمپ کو ہٹانے کی قرارداد منظور کی گئی۔

ایوان نمائندگان کی قرارداد کے بعد نائب صدر کو اپنے اختیارات استعمال کرنے کے لیے کہا گیا لیکن مائیک پنس نے اختیارات کے استعمال سے گریز کیا ہے اور صدر ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے سے انکار کیا ہے۔

امریکی نائب صدرپنس کا کہنا ہے کہ 25 ویں آئینی ترمیم سے ہٹانے سے غلط روایات جنم لیں گی، نہیں سمجھتاکہ25ویں آئینی ترمیم امریکی آئین سےمطابقت رکھتی ہے۔

امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نے اس حوالے سے کہا ہے کہ امریکی تاریخ اورروایات کی قدرکرتےہیں، 25آئینی ترامیم سےمجھےصدارت سےہٹانامیرےلیےکوئی خطرہ نہیں۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں