ہمارے متعلق

مسعود مُنّور

masood

مسعود مُنّور نارویجین شہری ہیں اورانیس سو نوے سے تدریس کے شعبے سے وابستہ ہیں ۔ اپنا شعری سفر کراچی میں جون ایلیا کی اُنگلی پکڑ کر شروع کیا اور جب سے اخبارات ، جرائد ، ٹی وی، ریڈیو اور فلم اُن کا تختہء مشق رہے ہیں۔

سفر ہمیشہ اُن کے معمولات کا جزو رہا ہے ۔ کراچی ، لاہور ، کابل ، دہلی، لندن اور اوسلو اُن کے سفری پڑائو ہیں ۔حلقہء اربابِ ذوق لاہور کے وہ واحد رکن ہیں جن کا نام 80 کی دہائی میں حلقے کے اراکین کی فہرست سے خارج کر دیا گیا تھا۔ALIEN ہونے کی سزا ۔

اب وہ ناروے کے ادیبوں کے مرکز کے رکن ہیں ۔ اُن کے پانچ شعری مجموعے اب تک شائع ہو چکے ہیں : دیو مالا( اُردو) صدا سبز سرگم ( اُردو) سورج کی بشارت ( اُردو) قائد اعظم دی وار( پنجابی) دیس نکالا( پنجابی) ۔ مضامین کا ایک مجموعہ "خلطِ مبحث ” کے نام سے لاہور سے چھپ چکا ہے ۔

ہندوستان میں دو کتابوں کے تراجم شائع ہوئے ہیں۔ امرتا پریتم کا ناول دوسری منزل اور خوشونت سنگھ کے انگریزی ناول Train to pakistan کا ترجمہ پاکستان ایکسپریس کے نام سے دہلی سے چھپا

مسعود منور القمرآن لائن سے مدیر کی حیثیت سے وابستہ ہیں

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

شازیہ عندلیب

 

poetess--shahab[1]

ناروے میں مقیم شازیہ عندلیب درس و تدریس سے وابستہ ہیں۔ راولپنڈی میں پیداہوئیں۔وقارالنساء اسکول راولپنڈی سے ابتدائی تعلیم اور اوسلو ہائی اسکول سے ایجوکیشن میں بیچلر آنرزکی ڈگری حاصل کی۔زمانہ طالبعلمی ہی سے لکھنے کا سلسلہ جاری ہے۔ ریڈیو پاکستان اسلام آباد کی ورلڈ سروس سے کمپیرنگ کرتی رہیں۔

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

نصر ملک

nasar

ڈنمارک کے شہر کوپن ہیگن میں مقیم نصر ملک اردو اور پنجابی کے ادیب اور شاعر ہونے کے علاوہ مترجم، محقق،مولف اور ماہرِ نشریات بھی ہیں.

اہلِ ادب کو انہوں نے”قطبین”،” ہوئے مر کے ہم جو رسوا” اور ”دیوتاؤں کا زوال” جیسی لازوال کتابیں دیں اور بے باک صحافی کے طور پر ”صدائے وطن اور نوائے وقت” سے منسلک رہے.

نشریات کے ماہر کے طور پر دو عشروں سے زیادہ مدت انہوں نے ریڈیو ڈنمارک کی اردو سروس کے سربراہ کے طور پر گزاری۔ڈنمارک میں اردو کی ایک ویب‌ سائٹ‌اردو ہم عصر کے نگران اور القمرآن لائن سے مدیر کی حیثیت سے وابستہ ہیں

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

ناصر محمود کھرل

صوبہ پنجاب سے تعلق رکھنے والے ناصر محمود کھرل نے 1990ء میں اپنے کیرئیر کا آغاز بطور کارپوریٹ لاء کنسلٹینٹ کیا ۔ جس نے بعد انہوں نے صحافت کو اپنا کیرئیر بنایا۔ ان کا شمار اسلام آباد کے معروف صحافیوں میں ہوتا ہے۔ پاکستان کے مختلف قومی روزناموں میں ان کے فیچرز اور انٹرویوز شائع ہوتے رہتے ہیں۔

ناصر محمود کھرل معروف بین الاقوامی مجلوں سے وابستہ رہے ہیں۔اسلام آباد سے شائع ہونے والے انگریزی مجلے سالیڈیرٹی انٹرنیشنل کے ساتھ ایسیوسی ایٹ ایڈیٹر کے طور پر منسلک رہنے کےعلاوہ کراچی سے شائع ہونے والے بین الاقوامی مجلے پاکستان پوسٹ کے ریذیڈنٹ ایڈیٹر کے فرائص سر انجام دیتے رہے.

انہوں نے ورسٹائل نیوز نیٹ ورک کے نام سے 1999ء میں ایک قومی نیوز ایجنسی کی بنیاد رکھی۔ 2010ء میں پاکستان میں ”توانائی ”کے حوالے سے پہلے پاکستانی مجلے ”انرجی انٹرنیشنل” کی اشاعت کا آغاز کیا۔

ناصر محمود کھرل کی کتاب” ڈپلومیٹک وائر ”تدوین کے مراحل میں ہے۔جس میں ناصرمحمود کھرل نے پاکستان میں تیس سے زائد سفراء کرام سے کئے گئے انٹرویوز کو ترتیب دیا ہے۔ ان کی شائع شدہ کتاب ”زمستانی ہوا”ان کے یورپ کے سفر اور تجربات و مشاہدات پر مبنی ہے۔

ناصر محمود القمرآن لائن سے بطور ایگزیکٹو ایڈیٹر وابستہ ہیں۔

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

ذبیح اللہ بلگن

zabeeh

لاہور سے تعلق رکھنے والے ذبیح اللہ بلگن2000سے صحافت سے وابستہ ہیں اور چھ کتابوں کے مصنف ہیں جن میں’1)'(حلقہء یاراں ”2)'(”حریت کی راہ پر”(3)”غلت بیانیاں ”(4)”جہاد کشمیر و شکوک شہبات”(5)”جہاد میں خواتین کا کردار”(6)”معزز صحافی” شامل ہیں۔این این آئی، اوصاف اور جناح سے بھی ان کی وابستگی رہی ہے

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

سید برہان علی

سیدبرہان علی پاکستان کے ان چند صحافیوں میں سے ہیں۔ جنہوں نے صحافتی میدان میں باقاعدہ سپیشلائزیشن کرنے کے بعد قدم رکھا۔ سید برہان علی نے اپنے صحافتی سفر کا آغاز عرب میڈیاسے کیا۔ جن میں ابوظہبی ٹی وی، لیبیا ٹی وی، KSA 1، العربیہ اور الاخباریہ شامل ہیں۔ پاکستان کی صف اول کی معروف نیوز ایجنسی این این آئی میں اپنی خدمات سر انجام دیں۔ انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی سٹڈیز اسلام آباد سے بطور مدیر وابستہ رہے۔ جہاں پر انہوں نے میڈیا میں خواتین کے کردارکی منفی تصویر کشی کے حوالے سے کام کیا۔
سید برہان علی القمرآن لائن سے بطور مدیر اور رابطہ کار وابستہ ہیں

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

سرفراز احمد عباسی

سرفراز احمد عباسی اسلام آباد سے تعلق رکھتے ہیں ۔ اپنی صحافتی زندگی کا آغاز اسلام آباد کی مقامی صحافت سے کیا اور مختلف قومی روزناموں میں مدیر کے طور پر کام کرتے رہے۔ جس کے بعد 2002ء سے القمر آن لائن بحییثت مدیر وابستہ ہیں۔

×××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××××

ہاشم سید محمد بن قاسم

جناب محمد بن قاسم صاحب بین الاقوامی صحافت اور ادب سے گزشتہ تین دہائیوں سے وابستہ ہیں۔

آپ کے افکار، خیالات، افسانے، طنزومزاح، اور حالاتِ حاضرہ پر تبصرے اردو اور انگریزی میں شائع ہوتے رہے ہیں جن کا عنوان:۔۔جستجو۔۔The Questہے۔

آپ بلاد العرب کے سب سے پہلے روزنامہِ "اردو نیوز” کے لیے اس کی 1994میں اجراء کے وقت سے اس سے ایک آزاد قلم ادیب کی حیثیت سے وابستہ رہے، اور سعودی عرب کے سب سے بڑے اخبار عرب نیوز کےلیے بھی رپورٹنگ کی۔ ریاض سے ہی وہ پاکستان کی ایک اہم نیوز ایجنسی آن لائن نیوز نیٹ ورک کے لیے خدمات سرانجام دیتے رہے۔

محمد بن قاسم مالی اور کمپیوٹنگ کے امور کے کنسلٹنٹ اور اداروں کی ترقّی اور ترویج و بقا، اور اس کے سماجی پہلوؤں پر دسترس رکھتے ہیں۔ اس ضمن میں وہ دنیا کی کئی بڑی کمپنیوں کے لیے کام کرچکے ہیں۔ ان میں نیویارک کی کمپیوٹر ایسوسی ایٹس اور مشہور بین الاقوامی اکاؤنٹنگ فرم کے پی ایم جی انٹرنیشنل، اور کئی سعودی ہسپتال شامل ہیں۔ آپ سعودی عرب کی سب سے پہلی رسمی کمپیوٹر سوسائٹی کے بانی ممبران میں سے ہیں۔ ان کی دیگر جاری سرگرمیوں میں اردو انگریزی مسوّدات کی ادارت، اور اشاعت ہیں۔

جناب محمد بن قاسم صاحب کی تحریریں انٹرنیٹ کی دنیا میں ایک وسیع حلقہ اشاعت اور قرات رکھتی ہیں۔

انٹرنیٹ پر شائع شدہ مواد کے علاوہ، آپ کی ایک مقبول تصنیف "زرگرفت” ہے

××××××××××××××××××××××××××××

عتیق الرحمٰن

Attiq-smallچکوال سے تعلق رکھنے والے عتیق الرحمٰن نے 2006 میں سدا نیوز میں بطور سب ایڈیٹر اپنی صحافتی زندگی کا آغاز کیا۔ ڈیڑھ سال سدا نیوز کے ساتھ رہنے کے بعد بطور سب ایڈیٹر روزنامہ امت میں خدمات سر انجام دیتے رہے ۔

عتیق الرحمان 2007 سے القمرآن لائن کے ساتھ ادارتی امور کے نگران کے طور پر منسلک ہیں

××××××××××××××××××××××××××××

ذیشان علی

ذیشان علی القمرآن لائن کے ساتھ سب ایڈیٹر کی حیثیت سے وابستہ ہیں.

6 تبصرے “ہمارے متعلق

اپنا تبصرہ بھیجیں