نوجوان طالبعلم موٹر سائیکل سمیت دریائے چترال میں گر کر لاپتہ، تلاش جاری

نوجوان طالب علم موٹر سائیکل سمیت دریائے چترال میں گر کر لاپتہ ہوگیا۔ امدادی کارکن اور مقامی افراد کی جانب سے ابھی تک تلاش کی جا رہی ہے تاہم کوئی کامیابی نہیں ہوئی۔

حادثے کا شکار نوجوان کا نام شایان احمد بتایا جا رہا ہے۔ شایان احمد نے حال ہی میں میٹرک کا امتحان دیا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ ان کی بہنیں بھی اسی سڑک پر جا رہی تھیں جن کو شایان احمد کراس کرکے آگے نکلا اور ان کے سامنے وہ موٹر سائیکل سمیت دریا میں گر گیا۔

مقامی لوگوں واقعے کے فوری بعد نوجوان کی کی تلاش شروع کردی تاہم اس رپورٹ کی تحریر تک اس کا کوئی پتہ نہیں چل سکا۔ واضح رہے کہ چترال میں سڑکوں کی حالت نہایت ناگفتہ بہ ہے۔ اس سڑک پر تعمیراتی کام بھی شروع ہوا تھا۔

مقامی لوگ اکثر شکایت کرتے رہے کہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے زیر نگرانی جو سڑک کی کشادگی ہو رہی ہے اس میں ٹھیکیدار دریا کی جانب غیر معیاری حفاظتی دیوار تعمیر کر رہا ہے۔

ہمارے نمائندے نے پشاور یونیورسٹی میں پروفیسر ڈاکٹر جمیل سے فون پر بات کرکے ان سے اس واقعے کے بارے میں تفصیلات پوچھی جنہوں نے تصدیق کی کہ شایان احمد میرا بھائی کا اکلوتا بیٹا تھا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ دریا کا پانی گدلا ہونے کی وجہ سے امدادی ٹیموں کو نعش کی تلاش میں مشکلات کا سامنا ہے۔

 

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں