ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

اسرائیلی حمایت پر امریکی مسلم رہنماؤں نے وائٹ ہاؤس افطار ڈنر کا بائیکاٹ کردیا

واشنگٹن: صہیونی ریاست اسرائیل کی کھلی حمایت کرنے پر امریکی مسلم رہنماؤں نے وائٹ ہاؤس افطار ڈنر کا بائیکاٹ کردیا۔

خبر رساں اداروں کے مطابق فلسطینی علاقوں خصوصاً محصور پٹی غزہ پر جنگ مسلط کرنے اور خواتین و بچوں سمیت ہزاروں فلسطینیوں کی نسل کشی کرنے کے علاوہ وسیع تباہی کے نتیجے لاکھوں فلسطینیوں کو بے گھر کرنے والے جنگی مجرم اسرائیل کی دہشت گردی کو کھلی حمایت اور تعاون فراہم کرنے والے امریکی صدر جوبائیڈن کی اسرائیل نواز پالیسیوں کے خلاف امریکی مسلم رہنماؤں نے وائٹ ہاؤس کی جانب سے ہونے والے روایتی افطار ڈنر کے بائیکاٹ کا فیصلہ کرلیا۔

وائٹ ہاؤس کی جانب سے آج روایتی افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا ہے، جس پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے اور غزہ جنگ کے حوالے سے امریکی پالیسی سے اختلاف کا اظہار کرتے ہوئے امریکی مسلم تنظیموں نے احتجاجاً وائٹ ہاؤس کا افطار ڈنر چھوڑ کر وائٹ ہاؤس کے باہر افطار پروگرام منعقد کرنے کا اعلان کیا ہے۔

وائٹ ہاؤس کے روایتی افطار ڈنر کا بائیکاٹ کرتے ہوئے اس کے باہر ہونے والے احتجاجی افطار میں اسلامک سرکل آف نارتھ امریکا (اِکنا) اور امریکن مسلمز فار فلسطین (اے ایم پی) شریک ہوں گی۔

واضح رہے کہ امریکا میں مسلم تنظیمیں اسرائیل کی غزہ پر جاری دہشت گردی کے خلاف وائٹ ہاؤس سے پالیسی تبدیل کرنے کا مطالبہ کرنے کے ساتھ جنگ بندی پر زور دے رہی ہیں جب کہ امریکی صدر جوبائیڈن اسرائیل نواز پالیسیوں پر عمل کرتے ہوئے فلسطینیوں کی نسل کشی میں معاون ثابت ہو رہے ہیں۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں