ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

وفاقی حکومت کا پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ

وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے کہا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رہیں گی۔اسلام آباد میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رہیں گی جن کا اطلاق آج رات 12 بجے سے ہوگا۔خیال رہے کہ 15 دسمبر 2022 کو وفاقی وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے پیٹرول کی قیمت میں فی لیٹر 10 روپے اور ڈیزل کی قیمت میں 7 روپے 50 پیسے کمی کا اعلان کیا تھا۔اسلام آباد میں میڈیا بریفنگ میں وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے کہا تھا کہ مٹی کے تیل کی قیمت فی لیٹر 10 روپے کم کرکے 171 روپے 83 پیسے مقرر کی گئی ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا تھا کہ لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت 179 روپے فی لیٹر ہے جس میں 10 روپے کمی کرکے 169 روپے کردیا گیا ہے۔پیٹرولیم مصنوعات کی فی لیٹر قیمت پیٹرول: 214 روپے 80 پیسے ہائی اسپیڈ ڈیزل: 227 روپے 80 پیسے لائٹ ڈیزل آئل: 169 روپے مٹی کا تیل: 171 روپے 83 پیسے

وزیر خزانہ نے کہا تھا کہ یکم اکتوبر کو پیٹرول کی فی لیٹر قیمت میں 12 روپے 63 پیسے کمی کی گئی تھی، اسی طرح 30 ستمبر کو قیمت 237 روپے 45 پیسے تھی جو آج کمی کے بعد 214 روپے 80 پیسے ہوگئی ہے، اسی طرح فی لیٹر قیمت میں مجموعی طور پر 22 روپے 63 پیسے کی کمی ہو چکی ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ 30 ستمبر کو ہائی اسپیڈ ڈیزل 247 روپے 43 پیسے فی لیٹر تھا، اکتوبر میں 12 روپے 13 پیسے فی لیٹر کمی کی گئی تھی اور آج اس میں مزید 7 روپے 50 پیسے فی لیٹر کمی کی گئی ہے اور اس کے بعد مجموعی طور پر 19 روپے 63 پیسے کی کمی کے ساتھ نئی قیمت 227 روپے 80 پیسے فی لیٹر ہو چکی ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا تھا کہ لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت 30 ستمبر کو فی لیٹر 197 روپے 28 پیسے تھی، جس میں تین ماہ میں تین بار کمی کی گئی۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں یکم اکتوبر کو 10 روپے 78 پیسے، یکم دسمبر کو 7 روپے 50 پیسے اور آج 10 روپے کمی کی گئی ہے، جس کے بعد مجموعی طور پر 28 روپے 28 پیسے کی کمی سے 169 روپے فی لیٹر ہو چکی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا تھا کہ 30 ستمبر کو مٹی کے تیل کی قیمت 202 روپے 2 پیسے فی لیٹر تھی، جس میں یکم اکتوبر کو 10 روپے 19 پیسے، یکم دسمبر کو 10 روپے اور آج پھر 10 روپے فی لیٹر کمی کی گئی ہے، جس کے بعد مجموعی طور پر 30 روپے 19 پیسوں کی کمی کے ساتھ نئی قیمت فی لیٹر 171 روپے 83 پیسے ہوچکی ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا تھا کہ نئی قیمتوں کا اطلاق آج رات 12 بجے سے ہوگا، جس میں پیٹرول 214 روپے 80 پیسے، ڈیزل 227 روپے 80 پیسے، مٹی کا تیل 171 روپے 83 پیسے اور لائٹ ڈیزل آئل 169 روپے فی لیٹر ہوگا۔

اس سے قبل 30 نومبر کو وفاقی حکومت نے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں برقرار رکھنے جبکہ مٹی کا تیل اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں بالترتیب 10 روپے اور 7 روپے 50 پیسے کمی کردی تھی۔

وفاقی وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے کہا تھا کہ پیٹرول کی قیمت اس وقت 224 روپے 80 پیسے فی لیٹر ہے، اس میں بھی کوئی تبدیلی نہیں ہوگی اور اسی طرح برقرار رہے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ مٹی کے تیل میں 10 روپے فی لیٹر کمی کی جائے گی کیونکہ سردیاں شروع ہوچکی ہیں اور یہ کم ترین آمدنی والے افراد دیہاتوں اور دور دراز علاقوں میں لوگ استعمال کرتے ہیں، اسی لیے وزیراعظم کی رہنمائی میں قیمت میں کمی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں