ننگے پاؤں ہری گھاس پر چہل قدمی کیجیے اور لمبی صحت پائیے

ننگے پاؤں چہل قدمی کرنے سے انسانی صحت پر مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

یہ کہنا ہے قدرتی مناظر کے صحت پر اثرات کے حوالے سے تحقیق کرنے والے ماہرین کا ، اگر انسان ننگے پاؤں چلنے کے فوائد سے آگاہ ہونے کے ساتھ ساتھ اس کا عادی ہوجائے تو وہ جوتے پہن کرچلنے میں وہ سکون کبھی نہیں پائے گا جو وہ ننگے پاؤں چلتے ہوئے محسوس کر رہاہوتا ہے۔
ایک عمومی مشق یہ ہے کہ لوگ لمبی واک کرتے ہیں لیکن بھاری جوتے اور موزے پہن کر، کیلوریز کم کرنے کے لیے یہ واک موثر تو ہے لیکن ماہرین کہتے ہیں کہ اگر اس روٹین واک کو مزید موثر بنانا چاہتے ہیں تو صبح کے وقت تازہ اوس والی گھاس پر دس سے پندرہ منٹ ننگے پاؤں چہل ضرور کیجیے کیونکہ ننگے پاؤں چہل قدمی نہ صرف دماغ صحت پر خوشگوار اثر ڈالتی ہے بلکہ جسمانی دباؤ ، پٹھوں کے کھنچاؤ اور مجموعی تھکاوٹ کو دور کرکے صحت پر بہترین اثر ڈالتی ہے ۔

گھاس پرپیدل چلنے سے  جسم میں خون کی گردش بھی  بہتر ہوتی ہے اور  آنکھوں کی روشنی تیز ہوتی ہے ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ  زیابیطس کے مریضوں کو خاص طور اس طرح کی چہل قدمی کرنی چاہیے۔ جن مریضوں کو سانس لینے میں تکلیف ہوتی ہے ان  کے مسئلے کا حل بھی گھاس پر ننگے پاؤں چلنے میں ہے ۔ دراصل پیروں میں بہت سے رفلکس زونز ہوتے ہیں۔ یہ رفلکس زونز جب گھاس کے ساتھ رابطے میں آتے ہیں تو ان پر ہلکا دباؤ پڑتا ہے اور یہی دباؤ رفلکس زونز کو بغیر کوئی نقصان پہنچائے انہیں ایکٹیو بناتا ہے۔ان زونز کا سیدھا تعلق آنکھوں ، پھیپھڑوں ، منہ ، پیٹ ، دماغ اور گردوں سے ہوتا ہے۔ اس طرح ان حصوں کی  ورزش ہو جاتی ہے۔

ہمارے جسم میں پازیٹو توانائی کے ساتھ ساتھ نگیٹو توانائی بھی ہوتی ہے۔جب ہم گھاس پر ننگے پاؤں چلتے ہیں تو زمین کی مقناطیسی توانائی تلووں سے نگیٹو توانائی کو باہر کھینچ لاتی ہے۔ سیر کرنے کے دوران صبح کی سورج کی کرنوں سے جسم میں وٹامن ڈی کی کمی دور ہوتی ہے۔ خاص طور پرحاملہ عورتوں کو تو صبح سویرے گھاس پر ضرور ٹہلنا چاہئے کیونکہ انہیں اس دوران وٹامن ڈی کی اورزیادہ ضرورت ہوتی ہے۔

صبح گھاس پر چلنے سے پھیپھڑوں سے متعلق بیماری والے مریضوں کو تازہ ہوا ملتی ہے جس میں آکسیجن کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔صبح کی دھوپ میں وٹامن ڈی بھرپور
مقدار میں ہوتی ہے اور آلودگی اور دیگر مضر عناصر بھی نہیں ہوتے۔اس لئے صبح سویرے گھاس پر ننگے پاؤں چلنا سب سے زیادہ مفید ثابت ہوتا ہے ۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں