ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

کورونا کی پابندیوں کے خلاف فرانس میں مظاہرین پیرس کی جانب روانہ

پولیس کی جانب سے واپس جانے کا انتباہ جاری کرنے کے باوجود کورونا وائرس کی ویکسین لگوانے سے متعلق قانون اور دیگر پابندیوں کے خلاف فرانس بھر سے مظاہرین پیرس کی جانب روانہ ہوگئے۔

امریکا سے متصل سرحد پر ٹریفک کو متاثر کرنے والے کینیڈین ٹرک ڈرائیورز سے متاثر ہوکر فرانسیسی مظاہرین بایون، پرینیا، لیون، لیلی، اسٹراس برگ اور دیگر مقامات سے دارالحکومت کی طرف روانہ ہو رہے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ تقریباً ایک ہزار 800 گاڑیاں دارالحکومت میں داخل ہوچکی ہیں۔

مظاہرین میں ویکسین کی مخالفت کرنے والے کارکنان شامل ہیں، لیکن کچھ لوگ توانائی کی قیمت میں تیزی سے اضافے پر بھی خفا ہیں، ان کا کہنا ہے کہ اس عمل سے کم آمدن والے خاندان شدید متاثر ہو رہے ہیں، اس سے قبل 2018 اور 2019 میں ’یلو ویسٹ‘ کی جانب سے بڑے پیمانے پر احتجاج کیا گیا تھا۔

مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ حکومت عوامی مقامات پر داخلے کے لیے ویکسین پاس کی شرط واپس لے اور توانائی کے بلوں میں ان کی مدد کی جائے۔

مغربی حصے چیٹوں برگ سے نکلنے والے قافلے میں موجود 62 سالہ ریٹائرڈ ہیلتھ ورکر لیزا کا کہنا تھا کہ’انہیں ہمارا مطالبہ سننا ہوگا، لوگ صرف معمول کے مطابق آزاد زندگی گزارنا چاہتے ہیں‘۔

دوسرے مظاہرین کی طرح لیزا بھی ’یلو ویسٹ‘ کی تحریک میں سرگرم تھی، یہ احتجاج صدر ایمانوئیل میکرون کے خلاف دیگر شکایات سے قبل ایندھن کے ٹیکس میں اضافے پر کیا گیا تھا۔

منبع: ڈان نیوز

The post کورونا کی پابندیوں کے خلاف فرانس میں مظاہرین پیرس کی جانب روانہ appeared first on شفقنا اردو نیوز.

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں