بلدیاتی انتخابات کے دوران سندھ میں سخت انتظامات کی ہدایت

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت بلدیاتی انتخابات میں امن امان کے حوالے سے اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے۔ 4 ڈویژنوں میں؛ میرپورخاص، شہید بینظیر آباد، سکھر اور لاڑکانہ میں جون 26 کو بلدیاتی انتخاب ہونے جارہے ہیں۔
وزیراعلی کا کہنا ہے کہ ضمنی انتخابات میں بھی اچانک امن امان کی صورتحال بن گئی تھی۔ اس قسم کے واقعات نہیں ہونے چاہیے تھے۔ پولیس ایسا پلان بنائے تاکہ کوئی شدت پسند پولنگ کے پاس نہ آسکے۔ 4 ڈویژنوں کے 14 اضلاع میں 8724 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے جائیں گے۔ان پولنگ اسٹیشنوں میں 1985 تمام حساس، 3448 حساس اور 3291 نارمل ہیں۔ سندھ پولیس کے 26545 اہلکاروں کو تعینات کیا جائے گا۔
وزیراعلیٰ سندھ نے ٹریننگ سینٹرز، سی ٹی ڈٰ، کرائم برانچ، ایس آر پی سے بھی پولیس فورس پولنگ اسٹیشنوں پر لگانے کی منظوری دیدی۔ وزیراعلیٰ نے انسپیکٹر جنرل کو پولنگ اسٹٰیشنوں پر پولیس اہلکار پہچانے کیلئے ٹرانسپورٹ کا بندوبست کرنے کی ہدایت کردی۔
مراد علی شاہ کا کہنا ہے امن امان پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرونگا۔ پولنگ والے دن اسلحہ پر مکمل پابندی ہوگی۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا بلدیاتی الیکشن کے دوران اسلحہ کی نمائش پردفعہ 144 لگا کر پابندی لگائی جائے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کمشنرز کو تمام سیاسی پارٹیز کو اعتماد میں لینے، الیکشن کے دنوں میں پاور ڈسٹریبیوشن کمپنیوں کو لوڈشیڈنگ نہ کرنے اور پولیس کی گاڑیوں پر سی سی ٹی وی سسٹم لگا کر مانیٹرنگ کی ہدایت دی۔
اجلاس میں چیف سیکریٹری سہیل راجپوت، آئی جی پولیس غلام نبی میمن، سیکریٹری داخلہ، کمشنر کراچی، ایڈیشنل آئی جی کراچی، ڈی آئی جیز اور 4 ڈویژن سے کمشنرز اور ڈی آئی جیز وڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں