ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

عمران خان 9 مئی واقعات کا ماسٹر مائنڈ تھا، ملوث افراد کیلیے کوئی معافی نہیں، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ ملک میں 9 مئی کو ہونے والے پرتشدد واقعات کا ماسٹر مائنڈ عمران خان تھا۔ جلاؤ گھیراؤ اور توڑ پھوڑ میں ملوث افراد کے لیے کوئی معافی نہیں۔

وفاقی دارالحکومت میں جناح کنونشن سینٹر میں تحفظ شہدا کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا ہے خواہ میں کسی کے لیے سفارش کروں مگر کسی بھی گناہ گار کو نہیں چھوڑا جائے گا اور اسی طرح کسی بے گناہ کو سزا نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے شرپسندوں نے 9 مئی کو ریڈلائن کراس کی ہے، ان کے لیے کوئی معافی نہیں ہے۔

وزیراعظم نے خطاب میں کہا کہ شہدا ہمارے ہیرو ہیں، ان کی توقیر پر کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔ فخر محسوس ہو رہا ہے کہ آج ہم شہداکو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے جمع ہیں۔ یہ وہ شہدا ہیں جنہوں نے پاکستان کی مٹی اور اس وطن کے دفاع کے لیے اپنی جانیں قربان کیں۔

شہباز شریف نے کہا کہ افواج پاکستان ،قانون نافذ کرنے والے ادارے، پولیس ،سیکورٹی ایجنسیز کے افسران اور جوانوں نے اس ملک کے لیے قربانیاں دیں۔ 86 ہزار سے زائد قربانیوں کی وجہ سے ملک میں امن و استحکام آیا مگر جو کچھ 9 مئی کو ہوا وہ کبھی نہیں بھلایا جا سکتا ،یہ ہمیشہ ایک سیاہ دن کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔

وزیراعظم نے زور دیا کہ تحریک انصاف کے شرپسندوں اور اس کے سربراہ عمران خان نے جس طرح لوگوں کو مشتعل کیا سب کچھ ایک منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا جس کا ماسٹر مائنڈ عمران خان تھا وہ خود کو بری الزمہ قرار نہیں دے سکتا۔کوئی سیاسی جماعت کیا ایسا کر سکتی ہے کہ گرفتاری کی صورت میں ریاست پر حملہ کر دے،جب یہ حکومت میں آیا تو اس نے پوری اپوزیشن کو جیلوں میں ڈال دیا ہم نے کوئی گڑ بڑ نہیں کی۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ گرفتاریاں دِیں ،جیلوں میں گئے  مگر توڑ پھوڑ نہیں کی ۔ریاستی اور دفاعی اداروں کو نقصان نہیں پہنچایا ،ذوالفقار علی بھٹو کوپھانسی ہوئی ،محترمہ بے نظیر بھٹو شہید ہوگئیں، نواز شریف کو جلا وطن کیا گیا پھر دوبارہ ان کی حکومت ختم کر دی گئی مگر کسی سیاسی جماعت نے اپنے ملک کو یا اس کے جھنڈے کو نقصان نہیں پہنچایا اور  عمران خان جس دن گرفتار ہوتا ہے، جلاؤ گھیراؤ اوردفاعی و فوجی تنصیبات پر اس کے شرپسند حملہ آور ہوتے ہیں جن کو قانون کے کٹہرے میں لایا جارہا ہے ان کے لیے کوئی معافی نہیں۔

انہوں نے کہا کہ ریاست پر حملہ ناقابل معافی جرم ہے ۔ ریاست کمزور نہیں ،شہدا کی تصاویر اور یادگاروں کی بے حرمتی کی گئی ۔سوچیں ان شہیدوں کے ورثا اور لواحقین پر کیا گزرتی ہوگی۔وزیر اعظم نے واضح کیا کہ ایسے عناصر کے لیے سخت قوانین کے تحت کارروائی کریں گے تا کہ آئندہ کسی کو جرات نہ ہو۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں