ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

آرٹیکل 370: مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت بحالی کی درخواستیں مسترد

نئی دہلی :بھارتی سپریم کورٹ نے مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت کیلئے دائر اپیلوں پر متعصبانہ فیصلہ سنا دیا، آرٹیکل 370  مقبوضہ جموں و کشمیر (IIOJK) کو خصوصی حیثیت کو ایک عارضی شق قرار دے دی۔

بھارتی سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر بھارت کا اٹوٹ انگ ہے، آرٹیکل 370 عارضی تھا، ہر فیصلہ قانونی دائرے میں نہیں آتا۔

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی زیرقیادت حکومت نے اگست 2019 میں یکطرفہ طور پر مقبوضہ وادی کی خصوصی حیثیت کو ختم کر دیا تھا اور اس غیر قانونی اقدام کے خلاف مظاہروں کو روکنے کے لیے دسیوں ہزار فوجی تعینات کیے تھے۔

اس کے بعد درخواستوں کے ایک بیچ نے آئین کے آرٹیکل 370 کی منسوخی کو چیلنج کیا اور چیف جسٹس آف انڈیا (سی جے آئی) دھننجایا یشونت چندرچوڑ کی قیادت میں پانچ ججوں کی بنچ نے اس معاملے کی 16 دن تک سماعت کی اور 5 ستمبر کو اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا۔

یاد رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ کے پانچ ججوں پر مشتمل بنچ نے ہنگامی سماعتوں کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں