ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

پاکستانی فلموں اور ڈراموں کی نیٹ فلکس تک رسائی کیوں نہیں؟ نبیل قریشی نے بتادیا

 لاہور: نامور فلمساز نبیل قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان اور انڈیا کے درمیان کشیدگی کی وجہ سے پاکستانی فلموں اور ڈراموں کو نیٹ فلکس پر جگہ نہیں ملتی۔ 

ایک تازہ انٹرویو میں عالمی سطح پر پاکستانی سینما کی رسائی پر فلمساز کا کہنا تھا کہ اس کام میں بنیادی رکاوٹ دونوں ملکوں کے درمیان بڑھتا ہوا تناؤ ہے۔

انہوں نے کہا کہ نیٹ فلکس کا پہلا ہیڈ آفس لاس اینجلس میں ہے جبکہ انہوں نے اپنا دوسرا ریجنل دفتر انڈیا میں کھولا ہے اور وہاں  پاکستان کی رسائی نہیں ہے۔

نبیل قریشی کا مزید کہنا تھا کہ انڈیا میں نیٹ فلکس کا مقامی دفتر قائم ہونے سے پاکستانی فلموں اور ڈراموں کی او ٹی ٹی پلیٹ فارم پر رسائی بہت زیادہ متاثر ہوئی ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا اگرچہ انڈیا کی شوبز انڈسٹری بہت بڑی ہے لیکن زبان کی مشابہت کی وجہ سے پاکستانی انڈسٹری کو پھلنے پھولنے کا موقع مل سکتا ہے۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں