عمران ریاض خان نے مجھ پر ملک دشمنی کے گھٹیا اور بیہودہ الزامات لگائے: ناجیہ اشعر

خاتون صحافی ناجیہ اشعر نے کہا ہے کہ عمران ریاض خان نے مجھ پر ملک دشمنی کے گھٹیا اور بیہودہ الزامات لگائے جس نے مجھے اور میری فیملی کو کئی مہینوں ذہنی کرب میں مبتلا رکھا۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں ناجیہ اشعر نے لکھا کہ آزادی اظہار ہر شہری کا بنیادی حق ہے لیکن جھوٹے اور بے بنیاد الزامات نہیں۔

تاہم انہوں نے عمران ریاض خان کی جانب سے گھٹیا الزامات کے باوجود بڑے پن کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ میں اس کے باوجود اس کی غیر قانونی گرفتاری کی مذمت کرتی ہوں۔

اس ٹویٹ کے ردعمل میں جلیلہ حیدر نے کہا مجھے نہیں معلوم تھا ناجیہ اشعر آپ بھی اس کے عتاب کے نشانے پر رہی ہیں۔ مجھ پر اور گلالئی اسماعیل پر عمران ریاض خان نے پورا پروگرام کیا تھا۔

جلیلہ حیدر نے بتایا کہ مجھے ناصرف غداری کے الزامات لگائے بلکہ کوئلہ کی کان میں شہید ہونے والوں پر بھی بہت بڑی زبان استعمال کی جس کی وجہ سے ملکی سطح پر مرنے والوں کے خلاف کمپین چلی۔

رابعہ محمود نے دونوں خواتین صحافیوں کیساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے ٹویٹ کی اور کہا کہ ریاستی پالیسیوں، اداروں پر تنقید کے لئے من مانی گرفتاری اور نتقامی کارروائی کی مذمت کی جانی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ چاہے اس کا ہدف عمران ریاض خان پر ہی کیوں نہ ہو، جس صحافی نے برسوں سے ڈس انفارمیشن کے ایجنٹ کے طور پر کام کیا اور پاکستان میں آزادی صحافت اور آزادی اظہار رائے کو شدید نقصان پہنچایا۔

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

ٹیلی گرام کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

القمرآن لائن کے ٹیلی گرام گروپ میں شامل ہوں اور تازہ ترین اپ ڈیٹس موبائل پر حاصل کریں

تمام خبریں اپنے ای میل میں حاصل کرنے کے لیے اپنا ای میل لکھیے

اپنا تبصرہ بھیجیں